Code : 2407 58 Hit

بن سلمان کا من مانی گرفتاریوں کا بازار گرم

معروف برطانوی اخبار نے لکھا ہے سعودی صحافی جمال خاشقجی کے قتل کے ایک سال بعد بھی سعودی عرب میں من مانی گرفتاریوں کا سلسلہ جاری ہے۔

ولایت پورٹل:برطانیہ کے کثیر الاشاعت گارڈین اخباراپنی ایک رپورٹ میں لکھا ہے کہ سعودی صحافی جمال خاشقجی کے قتل کے ایک سال بعد بھی اس ملک کے ولی عہد محمدبن سلمان  من مانے طریقہ سے اپنے مخالف سماجی کارکنوں یا مذہبی شخصیتوں  گرفتار کرتے جارہے ہیں،رپورٹ میں مزید آیا ہے کہ ولایت عہدی کی کرسی سنبھالنے کے چار سال بعد ملک میں عائد کچھ سماجی پابندیوں میں کمی لائی   جیسے خواتین کو گاڑی چلانے کی اجازت دی یا   یہ کہ خواتین  بغیر سرپرست مرد کی اجازت کے پاسپورٹ بنا سکتی ہیں لیکن ہیومن رائٹس واچ کی جانب سے جاری ہونے والی کل کی رپورٹ کے مطابق بن سلمان  کی اصلاحات کچھ تاریک حقائق میں گھری ہوئی ہیں  جن میں سماجی کارکن خواتین کی وسیع پیمانہ پر گرفتاریوں کی طرف اشارہ کیا جاسکتا ہے یہاں تک کہ ان میں سے کچھ کو جیل میں  درندگی  اور ہوس کا نشانہ بھی بنایا گیا ہے،کوڑے مارے گئے ہیں یا الیکٹرک شاک دیے گئے ہیں،ہیومن رائٹس واچ نے اپنی رپورٹ میں مزید لکھا ہے کہ  رواں سال میں سعودی عرب میں 20افراد کو گرفتار کیا گیا ہے جبکہ جمال خاشقجی کے قتل کے بعد سےاب تک 30افراد گرفتار ہوچکے ہیں۔



0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम