Code : 3041 38 Hit

ادلب میں دہشتگردوں کی نقل وحرکت؛روس کا اظہار تشویش

روسی صدر نے اپنے ترک ہم منصب کے ساتھ فون پر گفتگو کرتے ہوئے ادلب میں شامی فوج کے ٹھکانوں پر دہشت گردانہ حملوں پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔

ولایت پورٹل:تاس نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق روسی صدر ولادیمیر پوتن نے ترک صدر رجب طیب اردگان سے فون پر گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ شام کے صوبہ ادلب میں شدت پسند گروہوں کی سرگرمیوں پر گہری تشویش میں مبتلا ہیں۔
رپورٹ کے مطابق کریملن کے پریس دفتر نے پوتن اور اردگان کےدرمیان ہونے وال فون کال کے سلسلہ میں ایک بیان جاری کیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ اس گفتگو میں خطہ کی موجودہ صورتحال خاص پر طور پر ادلب میں  شدت پسند گروہوں کی سرگرمیوں پر توجہ دی گئی۔
بیان میں آیا ہے کہ پوتن نے شدت پسند گروپوں کی سرگرمیوں کے بارے میں اپنی شدید تشویش کا اظہار کیا۔
اسی مناسبت سے  دونوں صدور نے شام کی خودمختاری اور علاقائی سالمیت کے لئے غیر مشروط عزم کی ضرورت پر زور دیا۔
پوتن اور اردگان نے خطے میں تناؤ کو کم کرنے کے لئےاور ادلب کے معاملے پر دونوں فریقوں کے درمیان تبادلۂ خیال کو فروغ دینے پر اتفاق کیا۔
تاس نے کریملن کے بیان کا حوالہ دیتے ہوئے مزید لکھا ہے کہ  روسی اور ترک صدور نے ادلب میں تناؤ کو کم کرنے ، جنگ بندی کو یقینی بنانے اور دہشت گردی کے خطرے کو ختم کرنے کے لئے بات چیت تیز کرنے پر اتفاق کیا ہے۔
دونوں ممالک کےسربرہان نے وزرائے دفاع کے مابین فعال رابطے جاری رکھنے پر بھی اتفاق کیا۔
یادرہے کہ یہ گفتگو ایسے وقت میں ہوئی ہے جبکہ اردگان نے جمعہ کے روز شام چھوڑنے کے کچھ مطالبات کی مخالفت کرتے ہوئے کہا تھا کہ جب تک شام کی حکومت اپنے حملےبند نہیں کرتی ہے ہم ادلب سے پیچھے نہیں ہٹیں گے۔




0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम