ریاض میں متحدہ عرب امارات کا پرچم لہرائے جانے کے خلاف احتجاج

ریاض میں متحدہ عرب امارات سے وابستہ یمن کی جنوبی عبوری کونسل کے پرچم کو لہرائے جانے نے ہادی حکومت کے سابق وزیر کو مشتعل کردیا۔

ولایت پورٹل:القدس العربی اخبار کی رپورٹ کے مطابق ہادی حکومت کے مستعفی وزیر صالح الجوبانی نے ریاض میں جنوبی یمن  کی عبوری کونسل کے پرچم کو لہرائے جانے پر احتجاج کیا۔
یادرہے کہ جنوبی یمن کی عبوری کونسل ، جو جنوبی یمن کو شمالی یمن سے الگ کرنا چاہتی ہے ، نے حالیہ مہینوں میں عدن اور سقطری  سمیت متعدد صوبوں کا کنٹرول سنبھال لیا ہے اور خود مختاری کا اعلان کیا ہے۔
الجوبانی نے اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ پر لکھاکہ انھوں نےیمن میں سعودی سفیر محمد آل جابر کوایک  احتجاجی خط لکھ کر ان سے ریاض میں یمنی پرچم کے علاوہ کسی اور پرچم کے لہرائے جانے کے لئے  جنوبی یمن عبوری کونسل کے چیئرمین  عیدروس الزبیدی کے اقدام کی وضاحت کرنے کو کہا۔
انہوں نے مزید کہا کہ سعودی سفیر کو احتجاجی خط اس اقدام کے جواب میں ہادی حکومت کی خاموشی کا مشاہدہ کرنے اور اس معاملے پر سرکاری طورپر ناکامی کے بعد بھیجا گیا تھا، القدس العربی اخبار کے مطابق یمن میں سعودی سفیر نے ابھی تک اس خبر پر کوئی رد عمل ظاہر نہیں کیا ہے۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین