ایران اور سعودی عرب کے درمیان تعلقات سب کے فائدےمیں ہیں:عمران خان

پاکستانی وزیراعظم عمران خان نے اسلامی جمہوریہ ایران اور سعودی عرب کے ساتھ اسلام آباد کے قریبی تعلقات کا حوالہ دیا اور مزید کہاکہ تہران اور ریاض کے درمیان افہام و تفہیم خطے اور دنیا کے مفاد میں ہے  لہذا ہر ایک کو اس صورت حال کا یقین ہونا چاہیے۔

ولایت پورٹل:پاکستانی سرکاری ٹیلی ویژن (پی ٹی وی) نے عمران خان کے حوالے سے کہا کہ شنگھائی سمٹ میں شرکت کے لیے تاجکستان کے دورے کے دوران راشا ٹوڈے کے عربی سیکشن کے ساتھ ایک انٹرویو کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ عمران نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران پاکستان کا سب سے مہذب پڑوسی ہے اور ہم ہمیشہ ساتھ رہتے ہیں ، مشترکہ تجارت دونوں ممالک اور پورے خطے کے لیے بہتر ہے۔
پاکستانی وزیر اعظم نے سعودی عرب کا حوالہ دیتے ہوئے اسے اسلام آباد کا قریبی اتحادی اور پرانا دوست قرار دیا اور مزید کہاکہ اسلام آباد مخلصانہ طور پر ایران اور سعودی عرب کے درمیان مفاہمت کا خواہاں ہے، انہوں نے ایران اور سعودی عرب کے درمیان ممکنہ تصادم کے بارے میں تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اگر ایسا ہوا تو یہ پاکستان کے لیے تباہ کن ہوگا ، نہ صرف ہمارے لیے بلکہ ترقی پذیر ممالک کے لیے بھی  کیونکہ ان دونوں بڑے ممالک کے درمیان کوئی  بھی تنازعہ تیل کی قیمتوں کو متاثر کرتا ہے۔
عمران خان نے مزید کہا کہ کورونا وائرس کے پھیلنے کی وجہ سے اس وقت دنیا میں تیل کی فراہمی کی قلت ہے  جو زیادہ تر ترقی پذیر ممالک کو متاثر کرتی ہے۔ انہوں نے مزید کہاکہ یہ خدشہ ہے کہ ایران اور سعودی عرب کے درمیان کسی بھی طرح کے تصادم کا تیل کی قیمتوں پر فوری اثر پڑے گا جو دنیا بھر میں کم آمدنی والے ممالک کے لیے تباہ کن ہوگا۔
 وزیراعظم پاکستان نے کہا کہ  اس لیے نہ صرف پاکستان بلکہ سب کو اس بات کو یقینی بنانا چاہیے کہ ایران اور سعودی عرب کے درمیان بہتر افہام و تفہیم ہو۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین