Code : 3826 9 Hit

ڈنمارک میں مغربی پٹی پر صیہونیوں کے قبضے کے منصوبے کے خلاف احتجاج

سیکڑوں ڈینش شہریوں نے صہیونی حکومت کی طرف سے مغربی کنارے پر قبضہ کرنے کی کوشش کے خلاف احتجاج کیا اور ملکی حکام سے مطالبہ کیا کہ وہ اس حکومت کو بین الاقوامی قانون کی تعمیل کرنے پر مجبور کریں۔

ولایت پورٹل:فلسطینی نیوز ایجنسی وفا کی رپورٹ کے مطابق ڈنمارک کے دارالحکومت ، کوپن ہیگن کے سیکڑوں شہریوں نے ہفتے کے روز مغربی کنارے پر قبضے کے منصوبے کے خلاف احتجاج کیا جہاں مظاہرین پہلے اسرائیل اسکوائر میں جمع ہوئے اور پھر ڈینش پارلیمنٹ کی عمارت تک مارچ کیا۔
مظاہرین نے ڈینش حکام سے خطاب کرتے ہوئے ان سے فلسطین کی حمایت کرنے کا مطالبہ کیا اور کہا کہ وہ  صہیونی حکومت پر دباؤ ڈالیں کہ وہ بین الاقوامی قوانین کی پاسداری کرے۔
قابل ذکر ہے کہ مظاہرے میں شامل سینکڑوں شرکا نے فلسطینی جھنڈے اٹھارکھے تھے اور مسئلہ فلسطین کی حمایت میں تالیوں بچا رہے تھے نیز انھوں ایک آزاد فلسطینی ریاست کو تسلیم کرنے اور "اسرائیلی نسل پرست حکومتکے بائیکاٹ کا مطالبہ کیا۔
یادرہے کہ کل (ہفتہ) کو  لاطینی امریکی ممالک کے صدور ، وزرائے خارجہ اور کچھ سابق سیاسی اور ثقافتی عہدیداروں نے مغربی کنارے کے کچھ حصوں پر قبضہ کرنے کے منصوبے سے دستبرداری کے لئے اسرائیلی حکومت کے بائیکاٹ کا مطالبہ کیا۔
درایں اثنا سابق عالمی رہنماؤں کے ایک اور گروپ نے یورپی رہنماؤں سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ صہیونی حکومت پر دباؤ ڈالیں کہ وہ مغربی کنارے میں اپنے قبضے کے منصوبے پر عمل درآمد نہ کرے، نیلسن منڈیلا کے ہاتھوں 2007 میں The Elders‘‘بنائے جانے والے اس گروہ  نے فرانس ، جرمنی ، برطانیہ اور یوروپی یونین کے رہنماؤں کو لکھے گئے خط میں لکھا ہے کہ انہیں اس بات پر زور دینا چاہئے کہ مغربی کنارے کے کچھ حصوں کے "قبضے" کے نتیجے میں صہیونی حکومت کے منفی معاشی اور سیاسی نتائج برآمد ہوں گے۔






0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین