Code : 4011 8 Hit

مظاہرے کرؤ گے تو باقی کی زندگی جیل میں رہنا ہوگا:ٹرمپ کی نسل پرستی کے خلاف مظاہرین کو دھمکی

امریکی صدر نے نسل پرستی کے خلاف مظاہرے کرنے والوں کو طویل قید کی سزا کی دھمکی دی ہے۔

ولایت پورٹل:امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ پر نسل پرستی کے خلاف مظاہرے کرنے والے افراد  کو طویل مدتی قید کی دھمکی دی ہے، ٹرمپ نے پورٹ لینڈ میں وفاقی عدالتوں یا کسی بھی شہر یا ریاست میں وفاقی عمارتوں میں توڑ پھوڑ کرنے والوں اور مظاہرین کو انتشار پسند ، فسادی قرار دیتے ہوئے متنبہ کیا کہ ان کے خلاف قانونی چارہ جوئی کی جائے گی۔
متنازعہ امریکی صدر نے احتجاج ختم کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے انتباہ کیا کہ مظاہرین کو 10 سال تک قید کی سزا ہوسکتی ہے،یادرہے کہ امریکی پولیس کے ہاتھوں سیاہ فام امریکی شخص جارج فلائیڈ کی موت نے نسلی امتیاز اور کالوں کے ساتھ پولیس سلوک کے خلاف ریاستہائے متحدہ میں مظاہرے کی لہر دوڑادی جو ریاست ہائے متحدہ امریکہ کے مختلف حصوں میں گزشتہ دو ماہ سے زیادہ عرصے سے جاری ہیں۔
قابل ذکر ہے کہ امریکی مظاہرین کے ساتھ ٹرمپ کی جانب سے کیے جانے والے سلوک کو وسیع پیمانے پر تنقید کا نشانہ بنایا گیا ہے  اور گذشتہ ماہ  یہاں تک کہ امریکی سینیٹ کے ریپبلکن ممبروں نے بھی امریکہ میں ہونے والے مظاہروں کے ردعمل  کا اظہار کرتے ہوئے مظاہرین کے خلاف طاقت کا استعمال کرنے کے سلسلہ میں ڈونلڈ ٹرمپ پر تنقید کی تھی اس لیے کہ انھوں نے پولیس کو کھلی چھوٹ دے رکھی ہے کہ وہ جیسے چاہیں مظاہرین کے ساتھ سلوک کریں اور نسل پرستی کے خلاف جاری مظاہروں کو کچلیں  لیکن  پولیس کی جانب سے جتنی بربریت بڑھ رہی ہے اتنی ہی مظاہروں میں شدت آرہی ہے،کئی جگہوں پر تو مظاہرین نے نسل پرستی کی علامت سمجھے جانے والے مجسموں کو توڑ دیا ہے اور ایک جگہ پر اس کی جگہ ایک سیاہ فام معترض کے مجسمہ کو نصب کر دیا ہے۔



0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین