صیہونیوں میں خوف و ہراس؛ قدس آپریشن دہرائے جانے کا امکان

ایک طرف صیہونی سرحدی افوج میں ہائی الرٹ جاری کیا گیا جبکہ صیہونی تجزیہ کار آپریشن سیف القدس کے دہرائے جانے کے امکان کی بات کررہے ہیں۔

ولایت پورٹل:صیہونی سرکاری ٹی وی چینل نے اپنی ویب سائٹ پر اطلاع دی ہے کہ صیہونی حکومت کے سرحدی محافظوں کے کمانڈر امیر کوہن نے پورے (مقبوضہ فلسطین) میں یونٹ کے احتیاطی دستوں کے لیے ہنگامی حالت کا اعلان کر دیا ہے،عبرانی زبان کے میڈیا کے مطابق یروشلم اور اس کے اطراف میں الرٹ جاری کیا گیا ہے کیونکہ خدشہ ہے کہ وہاں صیہونی اور فلسطینی افواج کے درمیان جھڑپیں بڑھ جائیں گی۔
دوسری جانب صیہونی حکومت کےایک اور سرکاری ٹیلی ویژن چینل (کان) نے بھی اس سلسلہ میں اپنی ایک رپورٹ میں اسرائیلی سکیورٹی حکام کے حوالے سے انکشاف کیا ہے کہ اس وقت یہ تشویش پائی جاتی ہے کہ ہمیں قدس آپریشن کا اعادہ دیکھنے کوملے گا، عبرانی زبان کے چینل کے مطابق قدس کے پرانے حصے میں ہونے والی کاروائی نے پولیس اور سرحدی محافظوں کو مکمل چوکس کر دیا ہےکیونکہ خدشہ ہے کہ آپریشن کے دوران متعدد دیگر فلسطینی بھی اس کی پیروی کر سکتے ہیں۔
واضح رہے کہ صیہونی سکیورٹی حکام نے اتوار کی شام چینل سے بات کرتے ہوئے کہا کہ قدس اور یافا میں یکے بعد دیگرے آپریشنز کے باوجود دونوں کے درمیان کسی تنظیمی تعلق کا تصور نہیں کیا جا سکتا خاص طور پر چونکہ قدس آپریشن کا مرتکب حماس تحریک کا رکن تھا۔
 ادھراسرائیلی پولیس کے ایک اعلی عہدہ دار نے بھی کان چینل کو بتایاکہ ہم اس حقیقت سے پوری طرح واقف ہیں کہ سکیورٹی کی صورتحال خراب ہونے کا خدشہ ہے اور ہم انفرادی حملوں کی ایک نئی لہر دیکھ سکتے ہیں۔
یادرہے کہ ایک اور مسئلہ جس نے صیہونی حکومت کی سکیورٹی سروسز کو گھیر رکھا ہے وہ یہ ہے کہ فلسطینی عسکریت پسند نے نسبتاً جدید ہتھیار کیسے حاصل کیا۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین