صیہونیوں کے ساتھ ہاتھ ملانے والے فلسطینیوں ہونے والے مظالم میں برابر کے شریک ہیں:حماس

اسلامی مزاحمتی تحریک حماس کے ایک سینئر ممبر نے مراکش کے صیہونی حکومت کے ساتھ تعلقات کو معمول پر لانے کی مذمت کرتے ہوئے کہاکہ صیہونیوں کے ساتھ تعلقات کو معمول پر لانے والے فلسطینیوں کے خلاف صہیونیت کے جرائم میں برابر کے شریک ہیں۔

ولایت پورٹل:العہد نیوز ایجنسی کی رپورٹ  کے مطابق  اسلامی مزاحمتی تحریک حماس کے ایک سینئر ممبر محمود الزہار نے مراکش کے صیہونی حکومت کے ساتھ تعلقات کو معمول پر لانے کے حالیہ اقدام پر رد عمل کا اظہار کیا اور اس کی شدید مذمت کی، رپورٹ کے مطابق  انہوں نے اس سلسلے میں کہاکہ مراکش کا صہیونی حکومت کے ساتھ تعلقات کو معمول پر لانا فلسطینی عوام کی پشت میں خنجر گھونپنا اور صیہونی دشمن کو فلسطینی عوام کے خلاف جرائم کا ارتکاب کرنے پرتحفہ دیناہے۔
حماس کے سینئر ممبر نے مزید کہاکہ صیہونی حکومت کے ساتھ تعلقات کو معمول پر لانے والے فلسطینیوں کے خلاف اس حکومت کے جرائم میں برابر سےملوث ہیں۔
 الزہار نے مراکشی پارلیمنٹ سے صہیونی دشمن کے ساتھ تعلقات کو معمول پر لانے کے اقدام کو مجرمانہ ہونے کا مطالبہ کرتے ہوئے امت اسلامیہ کے علمائے کرام سے بھی مطالبہ کیا کہ وہ اس حکومت کے ساتھ کسی بھی  طرح کےتعلقات کی مذمت کریں اور اس کی مخالفت کریں۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین