Code : 3067 16 Hit

مغربی پٹی میں صدی ڈیل کے خلاف مظاہروں میں 56 فلسطینی زخمی

قابض صیہونی فوج نے مغربی پٹی کے شمال مشرق میں واقع شمالی اغوارکے علاقے میں فلسطینی مظاہروں پر براہ راست فائرنگ کی اور آنسو گیس چھوڑی جس کے نتیجہ میں 56 فلسطینی زخمی ہوگئے۔

ولایت پورٹل:ترکی کی اناتولی نیوزایجنسی کی رپورٹ کے مطابق قابض صیہونی فوج نے مغربی پٹی کے شمال مشرق میں واقع شمالی اغوارکے علاقے میں صدی ڈیل کے خلاف مظاہرہ کرنے والے فلسطینوں پر حملہ کر کے 56افراد کو زخمی کردیا۔
فلسطین کی ہلال احمر کمیٹی کا کہنا ہے کہ  صیہونی قابض فوج نے 6 فلسطینی مظاہرین کو براہ راست فائرنگ کر کے زخمی کیا جبکہ 5افراد ربر کی گولیوں سے زخمی ہوئے جنہیں ہسپتال منتقل کیا گیا۔
ہلال احمر کے بیان کے مطابق بیان آنسو گیس کے نتیجے میں مزید 50 فلسطینی دم گھٹنے کا شکار ہوگئے جن میں سے 8 کی حالت زیادہ  خراب ہونے کی وجہ سےانھیں اسپتال منتقل کیا گیا اور بقیہ افراد کا موقع پر ہی علاج کرایا گیا۔
یادرہے کہ  مظاہرین کو منتشر کرنے کےلیے صیہونی فوج کی جانب سے ان پر حملہ کیے جانے کے بعد یہ جھڑپ ہوئی ۔
اسرائیلی عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ صیہونی فوج نے دسیوں فلسطینی مظاہرین کو بردلا علاقہ میں  جانے سے روک دیا جہاں  فلسطینی کارکن درخت لگانے کا ارادہ کر رہے تھے۔
یادرہے کہ صہیونی وزیر اعظم بنیامن نیتن یاہو نے ہفتے کی شب کہا  تھا کہ صدی ڈیل کی بنیاد پر تشکیل دی گئی امریکی اسرائیلی کمیٹی نے مغربی پٹی  کے کچھ حصوں کو اسرائیل میں ضم کرنے کے لیے مفصل نقشہ کھینچنا شروع کردیا ہے۔
صیہونی اخبار یدیوت احارنوٹ نیتن یاہو کے حوالہ سے کہا کہ اس کام میں  زیادہ دیر نہیں لگے گی  یہ چند ہفتوں میں ختم ہوجائے گا۔
صہیونی ذرائع  ابلاغ کے مطابق اسرائیلی امریکی کمیٹی نے بستیوں ، وادی اردن اور مغربی پٹی کے کچھ حصوں کو اسرائیلی مقبوضہ علاقوں میں شامل کرتے ہوئے مستقبل کی فلسطینی اور اسرائیلی ریاست کے لئے منصوبے تیار کرنا شروع کردیے ہیں۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین