فلسطینی گروپ جلد از جلد سنجیدہ بات چیت کریں؛ فلسطینی اتھارٹی کا مطالبہ

فلسطینی اتھارٹی کے سربراہ نے فلسطینی گروپوں سے داخلی تقسیم کو ختم کرنے کے لئے فوری اور سنجیدہ بات چیت کرنے کا مطالبہ کیا۔

ولایت پورٹل:فلسطینی اتھارٹی کے سربراہ  محمود عباس نے (کل) پیر کو رام اللہ میں فتح انقلابی کونسل کی سالگرہ کے  موقع پر منعقد ہونے والے اجلاس میں سازشوں کا مقابلہ کرنے کے لئے قومی اتحاد کی ضرورت پر زور دیا،عباس نے کہا کہ مضبوط قومی اتحاد کے ساتھ ہم داخلی محاذ کے خلاف تمام سازشوں کو ناکام بنا سکتے ہیں نیز فلسطینی عوام کے واحد قانونی نمائندے کی حیثیت سے فلسطین لبریشن آرگنائزیشن کی حمایت کریں گے۔
انہوں نے فلسطینی قومی مفاہمت کے حصول کے لئے کوششوں کو جاری رکھنے کی ضرورت پر زور دیا نیز فتح اور حماس کی تحریکوں ، فلسطین لبریشن آرگنائزیشن کے ممبران اور اسلامی جہاد سے مطالبہ کیا کہ وہ تقسیم کے خاتمے کے لئے فوری طور پر چوبیس گھنٹے  کے اندرسنجیدہ بات چیت میں حصہ لیں۔
القدس العربی اخبار کے مطابق  عباس نے فلسطینی عوام اور اس کے مقصد کے خلاف چیلنجوں اور خطرات کا مقابلہ کرنے کے لئے ہر سطح پر قومی شراکت داری کی ضرورت پر زور دیا اور کہا کہ ہم مصر ، اردن ، قطر ، دیگر برادر ممالک اور عالمی برادری میں اپنے بھائیوں کے ساتھ ہیں،اس کے علاوہ  غزہ کی پٹی کی تعمیر نو کے سلسلہ میں  ہمارا مستقل رابطہ ہے۔
انہوں نے فلسطینی اتھارٹی کے توسط سے غزہ کی پٹی کی تعمیر نو کی ضرورت کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے بار بار کہا ہے کہ فلسطینی اتھارٹی غزہ کی پٹی کی تعمیر نو کے لیے قانونی ادارہ ہے،ان کے بقول یہ معاہدہ دونوں ممالک کے مابین دوطرفہ تعلقات میں پائے جانے والے فرق کی وجہ سے ممکن نہیں ہوسکا ہے۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین