Code : 4115 13 Hit

فلسطینی بچی روتی رہی اور صیہونیوں کی بربریت کے نتیجہ میں باپ اپنے ہی گھر کو گراتا رہا

کچھ ذرائع ابلاغ نے ایک فلسطینی لڑکی کی چیخ وپکار کی ویڈیو شائع کی ہے جس کے والد کو صہیونی حکومت نے گذشتہ رات اپنا ہی مکان تباہ کرنے پر مجبور کیا۔

ولایت پورٹل:عربی 21نیوز ویب سائٹ کی رپورٹ کے مطابق پیر کی شام ، صہیونی حکومت نے یروشلم کے جنوب میں مقیم ایک فلسطینی شہری "ابراہیم صیبعه"  کو اپنے ہی مکان  کوتباہ کرنے پر مجبور کیا،رپورٹ کے مطابق صیہونیوں نے یہ بہانہ بنایا کہ یہ گھر اجازت کے بغیر بنایا گیا ہے اور گھر کے مالک کو بھاری مقدار میں جرمانہ ادا کرے کی دھمکی دے کر انھیں اپنے ہی گھر کو مسمار کرنے پر مجبور کیا۔
فلسطینی بچی جب گھر کے انہدام کو دیکھتی ہے تو چلاتی ہے کہ  رک جاؤ،بس کرؤ، ہم ہم کہاں جائیں گے؟آخر میں  اس نے یہ جملہ دہرایاکہ (حسبی‌الله ونعم الوکیل)ہمارا رب ان سے بدلہ لے گا،یادرہے کہ صیہونیوں کے ہاتھوں مقبوضہ بیت المقدس میں یہ ساتواں مکان ہے جو ایک ہفتہ کے اندر تباہ کیا گیا ہے، اس سے قبل  بھی اقوام متحدہ کے دفتر برائے انسانی امور کی رابطہ تنظیم (او سی ایچ اے) نے فلسطینی عمارتوں کو مسمار کرنے اور ضبط کرنے کے بارے میں ایک تحریری رپورٹ میں کہا تھا کہ ان عمارتوں کو تعمیر کرنے کے لیے اسرائیلی حکام سے اجازت نہیں لی گئی ہے لہذا انھیں مسمار کیا جانا چاہیے۔
اقوام متحدہ کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ انہدام آپریشن کے نتیجے میں قریب 140 افراد کو نقصان پہنچا ہے اور 25 افراد نقل مکانی کرنے پر مجبورہوگئے ہیں، فلسطینی قانونی اداروں کا کہنا ہے کہ  بین الاقوامی اور اسرائیلی قانونی اداروں کے مطابق صہیونی حکومت نے مشرقی یروشلم اور مغربی کنارے میں واقع "سی" علاقوں میں مقیم فلسطینی شہریوں کو جان بوجھ کر تعمیراتی اجازت نامے دینے  میں کمی کردی ہے۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین