مقبوضہ بیت المقدس میں شہادت طلبانہ کاروائی کرنے والے فلسطینی کے اہلخانہ صیہونیوں کے ہاتھوں گرفتار

صیہونی حکومت کی فورسز نے مقبوضہ بیت المقدس میں شہادت طلبانہ کاروائی کروانے شخص کے اہل خانہ کو گرفتار کر لیا ہے۔

ولایت پورٹل:مرکز اطلاعات فلسطین کی رپورٹ کے مطابق حال ہی میں مقبوضہ بیت المقدس میں شہادت طلبانہ کاروائی کرنے والے فادی ابو شخیدم کی بیٹی کی تصویر شائع ہوئی جس سے ظاہر ہوتا ہے کہ اسے صہیونی فوج نے حراست میں لے لیا ہے۔
 رپورٹ کے مطابق شہادت طلبانہ کاروائی  کرنے والے شخص کی لڑکی کی عمر 12 سال سے کم بتائی جاتی ہے، ادھر صہیونی فوج نے مقبوضہ بیت المقدس میں شہادت طلبانہ کاروائی کرنے والے شخص اہلیہ کو بھی گرفتار کر لیا ہے۔
واضح رہے کہ ابوشخیدم کی اہلیہ پہلے اردن میں تھیں تاہم مغربی کنارے میں داخل ہوتے ہی اسرائیلی فورسز نے انہیں گرفتار کر لیاجس کے بعد فی الحال ان سے پوچھ گچھ کی جا رہی ہے، بعض ذرائع نے بتایا کہ صہیونیوں نے شیخدم کے بیٹے اور بھائی کو بھی گرفتار کر لیا۔
 قابل ذکر ہے کہ اتوار کی صبح القدس کے پرانے حصے میں مسجد اقصیٰ کے داخلی راستوں میں سے ایک کے قریب فائرنگ کا واقعہ پیش آیا، فائرنگ کے دوران فادی ابو شخیدم نامی فلسطینی نے صیہونی عسکریت پسندوں پر فائرنگ کی، اس واقعے میں ایک صہیونی ہلاک اور تین فوجیوں سمیت چارافراد زخمی ہوئے جن میں سے دو کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے۔
 یادرہے کہ شہادت طلبانہ کاروائی  کرنے والے فلسطینی کو صیہونی فوجیوں نے گولی مار کر شہید کر دیا،قابل ذکر ہے کہ اس آپریشن میں دو فلسطینیوں نے حصہ لیا جن میں سے ایک شناختی آپریشن کا ذمہ دار تھا اور دوسرا ایگزیکٹو تھاجس کے بعد صہیونیوں نے فوری طور پر مسجد اقصیٰ اور قدس کے پرانے حصے کے تمام داخلی راستوں کو بند کر دیا۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین