بن سلمان کو سزا نہ دینا انسانیت کو داغدار کرنا ہے:جمال خاشقجی کی منگیتر

سعودی صحافی جمال خاشقجی کے قتل سے متعلق واشنگٹن کی انٹلی جنس رپورٹ کے منظر عام پر آنے کے بعد ان کی منگیتر نے ٹویٹر پر ایک پیغام پوسٹ کیا جس میں سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کو فوری سزا دینے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔

ولایت پورٹل:روئٹرز نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق سعودی صحافی  جمال خاشقجی کے منگیتر  خدیجہ چنگیز  نے سعودی عرب کے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کو سزا دینے کا مطالبہ کرتے ہوئے آج (پیر) کو ٹویٹ کی،رپورٹ کے مطابق خاشقجی کے منگیتر نے اپنے پیغام میں لکھا کہ یہ لازمی ہے کہ سعودیولی عہد شہزادہ کو بلا تاخیر سزا دی جائے۔
 انہوں نے لکھا کہ اگر ولی عہد شہزادے کو سزا نہیں دی جاتی ہے تو یہ ہمیشہ کے لئے ظاہر کردے گا کہ اصل مجرم سزا پائے بغیر قتل کرسکتا ہےجوہمیں خطرہ میں ڈالتا ہے اور انسانیت کو داغدار بناتا ہے، خدیجہ چنگیز نے یہ بھی لکھاکہ تمام عالمی رہنماؤں کے لئے یہ ضروری ہے کہ وہ اپنے آپ سے یہ پوچھیں کہ کیا وہ کسی ایسے شخص سے ہاتھ ملانے کو تیار ہیں جس کے جرم کی تصدیق ایک قاتل کی حیثیت سے ہوئی ہے،آئیے بائیڈن حکومت سےہی اس کا آغاز کریں،یادرہےکہ  سعودی صحافی جمال خاشقجی کے قتل کے بارے میں جمعہ کے روز امریکی حکومت کی طرف سے جاری کردہ ایک رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ یہ قتل محمد بن سلمان کے براہ راست حکم پر کیا گیا تھا۔
 امریکی قومی انٹلی جنس ایجنسی کی جاری کردہ اس رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ محمد بن سلمان نے جمال خاشقجی کو گرفتاری یا قتل کرنے کے لئے آپریشنل اجازت نامہ جاری کیا،امریکی حکومت نے اس رپورٹ کے بعد اعلان کیا ہے کہ اس نے 76 سعودی عہدیداروں کے خلاف ویزا پابندیاں جاری کردی ہیں،امریکی سکریٹری خارجہ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ملک سے باہر مقیم افرادکو دھمکیاں دینے کے الزام میں 76 سعودی شہریوں پر ویزا پابندی عائد کردی گئی ہے۔
 نیوز ذرائع نے یہ بھی بتایا کہ امریکی محکمہ خزانہ اس قتل میں ملوث کچھ سعودی عہدیداروں پر پابندیاں عائد کرنے کا ارادہ رکھتا ہے، تاہم امریکی ٹریژری حکام نے کہا ہے کہ جمال خاشقجی کے قتل کے حکم کے باوجود سعودی عرب کے ولی عہد شہزادے کو پابندیوں میں شامل نہیں کیا جائے گا۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین