Code : 2957 54 Hit

خواتین کے لئے بے پردگی انسانی کمالات سے محرومیت کا سبب

دین کی تبلیغ بعض اوقات زبان سے ہوتی ہے اور بعض اوقات عمل سے ہوتی ہے۔پردہ دار خواتین کا صرف پردہ کرنا ہی پردے کی عملی طور پر تبلیغ ہے، کیونکہ وہ اس عمل سے بے پردہ عورتوں کو یہ بتارہی ہیں کہ ہم پردے کو پسند کرتی ہیں اور پردے کے ساتھ محفوظ بھی ہیں، آپ بھی باپردہ بن کر اپنا تحفظ کرسکتی ہیں۔

ولایت پورٹل: انسان جس قدر گناہ کا ارتکاب کرے اتنا انسانی اور روحانی کمالات سے محروم ہوجاتا ہے۔ جو عورتیں بے پردگی کرتی ہیں وہ یہ گناہ کرکے انسانی کمال کے راستوں پر گامزن ہونے سے رک جاتی ہیں۔ عورت کی ترقی و کمال کی ایک اہم اور ضروری بنیاد یہ ہے کہ وہ پردے اور حجاب کا خیال رکھے۔
جو خاتون تعلیم حاصل کرتی ہے وہ تعلیم کے صرف دنیاوی پہلو کو نہ دیکھے کہ اس تعلیم کا نتیجہ ڈگری یا نوکری کا مل جانا ہے، بلکہ وہ تعلیم کے معنوی اور روحانی پہلو پر بھی غور کرے کہ تعلیم حاصل کرنے سے کیا وہ انسانی کمالات کی طرف بڑھ رہی ہے یا نہیں؟
کیا قرآن کریم اور اہل بیت علیہم السلام کی تعلیمات کی روشنی میں زندگی گزار رہی ہے یا نہیں؟
کیا اپنے شوق کو پورا کرنے کے لئے تعلیم حاصل کررہی ہے یا علم کو عملی طور پر اپنی زندگی میں اپنانے کے لئے؟
اگر تعلیم حاصل کرنے سے اس کا مقصد یہ ہے کہ وہ نیک اعمال کرکے اللہ تعالیٰ کی فرمانبردار بن سکے تو پھر اسے وہی علم حاصل کرنا ہوگا جو دین کے اصول و ضوابط پر قائم ہو اور اس علم کے حاصل کرنے کے لئے بے پردگی جیسے گناہ کا اختیاراً یا قانوناً ارتکاب نہ کرے۔
اور اگر پردہ کرنے کی وجہ سے اس کا مذاق اڑایا جاتا ہے یا اس پر اعتراض کیا جاتا ہے تو وہ اچھے اخلاق کے ساتھ دوسروں کو حجاب کے فائدے اور بے پردگی کے نقصانات بتائے تاکہ خود بھی انسانی کمالات پر گامزن رہنے سے رک نہ جائے اور انسانی کمالات سے محروم خواتین کے لئے بھی راستہ فراہم کرے۔
دین کی تبلیغ بعض اوقات زبان سے ہوتی ہے اور بعض اوقات عمل سے ہوتی ہے۔پردہ دار خواتین کا صرف پردہ کرنا ہی پردے کی عملی طور پر تبلیغ ہے، کیونکہ وہ اس عمل سے بے پردہ عورتوں کو یہ بتارہی ہیں کہ ہم پردے کو پسند کرتی ہیں اور پردے کے ساتھ محفوظ بھی ہیں، آپ بھی باپردہ بن کر اپنا تحفظ کرسکتی ہیں۔


0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम