Code : 4381 8 Hit

شہید قاسم سلیمانی کی شہادت سے متعلق امریکی ریٹائرڈ جنرل کے نئے انکشافات

ایک امریکی صحافی نے اپنی کتاب میں سنہ 2016 میں سردار سلیمانی کے قتل کے سازش کی تفصیلات بیان کی ہیں۔

ولایت پورٹل:معروف امریکی صحافی باب ووڈورڈ نے اپنی کتاب "غصہ" کے ایک حصے میں ، ڈونلڈ ٹرمپ کے سپاہ پاسداران کی قدس فورس کے سابق کمانڈر ، سردار حاج قاسم سلیمانی کے قتل کے فیصلے سے متعلق نئے انکشافات لکھے ہیں۔
یادرہے کہ اس سے قبل ذرائع ابلاغ نے ٹرمپ کو سردار سلیمانی کے قتل پر راضی کرنے میں مائیک پومپیو کے کردار کا ذکر کیا تھا لیکن ووڈورڈ نے اپنی کتاب میں پہلی بار امریکی مسلح افواج سابق نائب چیف جیک کین کے کردار کابھی ذکر کیا ہے۔
کتاب کے مطابق ، جیک کین نے حاج قاسم کے بارے میں ٹرمپ سے بات کی جب وہ سن 2016 میں امریکی صدر منتخب ہوئے تھے، کین نے ٹرمپ کو جارج ڈبلیو بش انتظامیہ کی جنرل سلیمانی سے مقابلہ کرنے کی کوششوں اور خوف کے بارے میں بھی آگاہ کیا۔
کتاب کے مطابق ، کین نے ٹرمپ کو بتایا کہ جارج ڈبلیو بش کی قومی سلامتی کی ٹیم نے ان سے اس وقت کے صدر کی حیثیت سےایران میں ایسے دو اڈے مسمار کرنے کی اجازت طلب کی تھی جہاں سردار سلیمانی کی فوجیں موجود تھیں لیکن بش نے اس درخواست کی مخالفت کی۔
کین کا کہنا ہے کہ بش کے خیال میں اگر وہ ایران کے اندرٹھکانوں پر حملہ کرتے ہیں تو ان کا مواخذہ کیا جائے گا ۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین