Code : 4408 3 Hit

ایران کی جوہری توانائی کے سلسلہ میں عالمی برداری کو بہکانے کے امریکہ کی نئی سازش

ایران پر اقوام متحدہ کی عائد پابندیاں دوبارہ بحال کرنے کے منصوبے کی ناکامی پر ناراض امریکہ نے اسلامی جمہوریہ کے جوہری پروگرام کے بارے میں ایک نیا پروپگندہ شروع کیا ہے۔

ولایت پورٹل:روئٹرز نیوز ایجنسی نے ایک نامعلوم امریکی عہدہ دار کے حوالے سے دعوی کیا ہے کہ ایران کے پاس اس سال کے آخر تک جوہری ہتھیار بنانے کے لئے لازمی جوہری مواد موجود ہوگا، روئٹرز نے مذکورہ نامعلوم عہدیدار کے حوالے سے یہ بھی کہا ہے کہ ایران کے پاس تین ماہ میں جوہری بم بنانے کے لئے درکار جوہری مواد موجود ہوگا۔
امریکی عہدیدار نے اپنے بیان میں دعوی کیا ہے کہ ایران کی جوہری سرگرمیوں میں اشتعال انگیز اضافے کی وجہ سے یہ ملک اس سال (2020) کے آخر تک جوہری بم بنانے کے لئے درکار جوہری مواد حاصل کرسکتا ہے، انہوں نے کہا کہ یہ تخمینہ امریکہ کی جمع کردہ معلومات پر مبنی ہے جس میں بین الاقوامی جوہری توانائی ایجنسی بھی شامل ہے،روئٹرز کے مطابق  ایٹمی ہتھیار بنانے کے لئے 90 فیصد افزودگی کی ضرورت ہوتی ہے۔
امریکی عہدیدار نے ایران پر یہ بھی الزام لگایا کہ وہ طویل فاصلے سے بیلسٹک میزائل بنانے کے لئے شمالی کوریا کے ساتھ تعاون دوبارہ شروع کر رہا ہے۔
واضح رہے کہ امریکہ  جو ٹریگر میکانزم کو متحرک کرنے کی کوشش میں ناکام رہا ہے اب اسلامی جمہوریہ کی پرامن جوہری سرگرمیوں کی حساسیت کو بڑھانے کی کوشش کر رہا ہے اور کسی نہ کسی طرح ایسے غیر یقینی الزامات عائد کرکے اپنے ایران مخالف اقدامات کو جواز بنا رہا ہے۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین