نیتن یاہو کو سزا دی جائے؛صیہونی مظاہرین کا مطالبہ

صیہونی وزیر اعظم کے خلاف مسلسل 36 ویں ہفتےسے جاری مظاہروں کے سلسلہ میں صہیونی مظاہرین کی ایک بڑی تعداد نے مقبوضہ علاقوں کی گلیوں میں صہیونی حکومت کے وزیر اعظم کے خلاف نعرے بازی کی۔

ولایت پورٹل:معا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق صیہونی مظاہرین کی ایک بڑی تعداد نے گذشتہ رات اسرائیلی وزیر اعظم بنیامین نیتن یاھو کے خلاف ایک بار پھر مظاہرہ کیا، رپورٹ کے مطابق صہیونی مظاہرین مقبوضہ بیت المقدس میں واقع بنیامین نیتن یاھو کے گھر کے سامنے جمع ہوئے اور ان کے خلاف نعرے بازی کی۔
در ایں اثنا دیگر مظاہرے تل ابیب کے قریب واقع قصری شہر میں اسرائیلی وزیر اعظم کی خصوصی رہائش گاہ پر ہوئے، مظاہرین نے مطالبہ کیا کہ نیتن یاھو کے بدعنوانی کے مقدمات میں ملوث ہونے پر ان کے خلاف مقدمہ چلایا جائے،یادرہے کہ  اسرائیل کے وزیر اعظم بنیا مین نیتن یاہو ، جن پر مختلف مقدمات میں بدعنوانی کا الزام عائد کیا گیا ہے جس کی حال ہی میں سماعت ہوئی اور عدالتی حکم کے مطابق نیتن یاھو اپنے الزامات کے خلاف اپنا دفاع کرنے کے لئے چند منٹ کے لئے مقبوضہ بیت المقدس میں مرکزی عدالت میں حاضر ہوئے۔
یادرہے کہ گذشتہ سال ، ایک اسرائیلی پراسیکیوٹر نے نیتن یاہو پر باضابطہ طور پر بدعنوانی ، فراڈ اور عوامی اعتماد کے ناجائز استعمال کا الزام عائد کیا تھا تاہم اسرائیلی عدالت نے نیتن یاھو کو سزا سنانے سے انکار کردیا اور ادھر حال ہی میں عدالت نے کہا ہے کہ اسرائیل کے آنے والے انتخابات کے بعد نیتن یاہو کے خلاف مقدموں کی سماعت کا آغاز کیا جائے گا جبکہ صیہونی شہریوں کا ماننا ہے اوپر سے لے نیچے تک سب صیہونی حکام بدعنوانیوں میں ڈوبے ہوئے ہیں،قابل ذکر ہے کہ پوری دنیا پر قبضہ کرنے کے خواب دیکھنے والےایک مختصر سی آبادی کو کنترول نہیں کر سکتے ہیں، انھیں صرف نہتے فلسطینیوں پر ظلم کے پہار توڑنا آتا ہے۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین