Code : 2689 15 Hit

نیتن یاہو نہ عملی طور پر کابینہ تشکیل دینے کے اہل ہیں اور نہ اخلاقی طور پر:بینی گانٹز

بلیک اینڈ وائٹ صیہونی اتحاد کے رہنما نے بدھ کو کہا ہے کہ نیتن یاہو اخلاقی طور پر کابینہ تشکیل دینے کے اہل نہیں ہیں۔

ولایت پورٹل:یروشلم پوسٹ کی رپورٹ کے مطابق بلیک اینڈ وائٹ صیہونی اتحاد  کےرہنما بینی گانٹز نے بائیں بازو کی صیہونی جماعتوں پر زور دیا ہے کہ وہ ہر قسم کےآپسی  اختلاف کو ختم کریں اور یکجہتی کے ساتھ بنیامین نیتن یاہو کے لئے سیاسی استثنیٰ حاصل کرنے والی حکومت کی تشکیل کو روکیں،انھوں نے اینڈ وائٹ صیہونی اتحاد   کے اراکین کےدرمیان گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ بنیا مین نیتن یاہو عملی اور اخلاقی طور پر کابینہ تشکیل دینے کے اہل نہیں ہیں،انہوں نے زور دے کر کہا کہ اگر ہم نیتن یاہو  کی سربراہی میں قائم موجودہ حکومت سے آگے بڑھنا چاہتے ہیں تو ہمیں ذمہ داری کے ساتھ کام کرنا ہوگا اور ماضی کے مطالبات کو ایک طرف رکھنا ہوگا،یادرہے کہ صیہونی ریاست میں  بحران اور سیاسی تعطل کا سب سے بڑا مسئلہ ، جس کی وجہ سے ایک سال میں تیسرےعام انتخابات منعقد ہوں گے، وہ لیبر مین اتحاد (جس کے بارے میں تقریباً سب صیہونی سیاسی ماہرین  کا کہنا ہے کہ  اس تحاد کا کابینہ تشکیل دینے میں اہم کردار ہے) کا اختلاف رائے ہے، نیتن یاہو اور گینٹز دونوں کی  جماعتیں کابینہ تشکیل دینے میں ناکام رہی ہیں،واضح رہے کہ صیہونی پارلیمنٹ نے کچھ دن پہلےاپنے آپ کو تحلیل کردیا تھا جس کے بعد اس غیر قانونی ریاست میں آئندہ مارچ میں ایک سال کے اندر تیسری بار عام انتخابات ہوں گے اس لیے کہ  اس سے پہلے ہونے والے انتخابات میں کوئی بھی صیہونی پارٹی کابینہ تشکیل نہیں دے سکی، نہ نیتن یاہو کی پارٹی اور نہ ہی بینی گانٹز  کی سربراہی میں بننے والا بلیک اینڈ وائٹ صیہونی اتحاد   ۔


0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम