مراکش ایک قدم اور صیہونیوں سے قریب

صیہونی حکومت کے ایک عہدیدار نے اعلان کیا کہ اس حکومت کی وزارت جنگ سے وابستہ کمپنیوں میں سے ایک مراکش میں ہتھیار بنانے کی دو کمپنیاں کھولنے کا ارادہ رکھتی ہے۔

ولایت پورٹل:مراکش میں صیہونی حکومت کے مواصلاتی دفتر کے سربراہ شائی کوہن نے اعلان کیا کہ صیہونی وزارت جنگ سے وابستہ  فوجی سسٹم کی تعمیر میں مہارت رکھنے والی البیت سسٹمز کمپنی مراکش دو شاخیں قائم کرنے کا ارادہ رکھتی ہے۔
شہاب نیوز ایجنسی کی ویب سائٹ کی رپورٹ کے مطابق شائی کوہن نے کہا کہ ان دونوں شاخوں کے قیام کا مقصد فوجی نظام تیار کرنا ہے ، ان میں سے ایک شاخ الدار البیضاءشہر میں کھولی جائے گی۔
 انہوں نے ان دونوں شاخوں کے قیام کے وقت اور مشن کے بارے میں مزید تفصیلات کا ذکر نہیں کیا، یاد رہے کہ گزشتہ سال رباط اور تل ابیب نے مراکش میں خودکش ڈرون بنانے کے لیے دو فیکٹریوں کے قیام کے معاہدے پر بھی دستخط کیے تھے۔
 قابل ذکر ہے کہ مراکش اور صیہونی حکومت کے درمیان تعلقات مختلف شعبوں میں خاص طور پر فوجی اور سیکورٹی کے میدان میں نمایاں طور پر پھیل چکے ہیں۔
بدھ کے روز صیہونی داخلی سلامتی کے مشیر تساہی ہانگبی مراکش کے دارالحکومت رباط پہنچے جہاں انہوں نے مراکش کے وزیر خارجہ ناصر بوریطہ سے ملاقات اور گفتگو کی۔
یاد رہے کہ صیہونی پارلیمنٹ کے اسپیکر امیر اوہانہ نے بھی جمعرات کو مراکش میں اس ملک کے پارلیمنٹ اسپیکر رئید الطالبی سے ملاقات اور گفتگو کی۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین