مراکشی عہدہ دار کا صیہونی مظالم کے خلاف بیان

مراکشی عہدیدار نے کہا کہ صیہونی حکومت کے بیت المقدس میں اسلام اور عیسائیت کے مقدس مقامات کے خلاف اقدامات بین الاقوامی اور انسانی قوانین کی صریح خلاف ورزی ہے۔

ولایت پورٹل:اناطولیہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق مراکشی کونسل آف ایڈوائزرز کے اسپیکر النعم میارہ نے قاہرہ میں عرب لیگ کی 33ویں غیر معمولی کانگریس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اسرائیل کی طرف سے اسلامی اور عیسائی مقدسات کی کھلم کھلا خلاف ورزی بین الاقوامی اور انسانی قوانین کی صریح خلاف ورزی اور ایک خطرناک عمل ہے۔
انہوں نے مزید کہا کہ یروشلم اور اس کے شہریوں کے خلاف صیہونی حکومت کی جارحیت اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں کی صریح اور مسلسل خلاف ورزی ہے، جو القدس میں صیہونی فوج کے کسی بھی اقدام اور حملوں کو مسترد کرتی ہے۔
یاد رہے کہ حال ہی میں فلسطینی شہریوں کے خلاف صیہونی حکومت اور صیہونی بستیوں کے باکاروں کے اقدامات میں شدت آئی ہے اور وہ فوج کی حمایت اور تحفظ کے سائے میں مسجد الاقصی پر مسلسل حملے کر رہے ہیں۔
واضح رہے کہ یہ بیان ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جبکہ اس ملک نے 2020 سے دیگر عرب ممالک بشمول متحدہ عرب امارات، بحرین اور سوڈان کے ساتھ ساتھ تل ابیب کے ساتھ تعلقات کو معمول پر لانے کے لیے اقدامات کیے ہیں۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین