Code : 2214 288 Hit

موبائل؛بچوں کی تدریجی موت کا آلہ

آج موبائل انسان کی اہم ضرورت شمار ہوتی ہے اور انٹرنیٹ انفارمیشن و اطلاعات کا اہم سورس بن چکا ہے لیکن اگر اسے صرف کام کے لئے استعمال کیا جاتا لیکن افسوس یہ ہے کہ موبائل کام کے لئے نہیں تفریح کے لئے استعمال کیا جارہے اور اس کے لئے کسی طرح کی حد و حدود کا خیال بھی نہیں رکھا جارہا ہے بلکہ فضول کی سائیٹس اور یوٹیوب کے بے جا و بے حد استعمال سے عریانیت کو فروغ مل رہا ہے لہذا ابھی بھی وقت ہے ہم موبائل کا استعمال اپنے بچوں کی زندگی میں کم کریں اور انہیں تدریجی موت سے بچائیں۔

ولایت پورٹل: بچے کے ذہن کی ساخت کچھ اس طرح ہے کہ اس میں رطوبت کی مقدار زیادہ ہوتی ہے اور جب بچے موبائل ، کمپیوٹر یا ٹیبلیٹ استعمال کرتے ہیں تو ان سے نکلنے والی شعاؤں سے یہ رطوبت بڑوں کی نسبت جلد گرم  ہوکر سوکھ جاتی ہے یہی وجہ ہے کہ امریکہ میں ہر سال 3 ہزار بچے مغزی ٹیومر میں مبتلا ہوجاتے ہیں۔
اور ایک تحقیق میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ اگر بچے موبائل،یا ٹیبلیٹ کا استعمال بچپن سے ہی شروع کردیں تو جوانی کے آغاز سے ہی ان میں مغزی کینسر کے جراثیم پیدا ہونا شروع ہوجاتے ہیں۔
آج کے زمانے میں بچوں کی تربیت بہت سخت ہوگئی ہے چونکہ اب موبائیل بچوں کی زندگی میں مکمل طور پر داخل ہوچکے ہیں اور اب بچے موبائیل اپنے سرہانے رکھ کر سوتے ہیں۔
اور آج پوری دنیا میں برطانیہ،مجارستان،اسپین،سوئڈن، اسٹریلیا میں صرف 10 سال کے عرصہ میں نوجوانوں کے درمیان موبائل کا استعمال 100 فیصد تک بڑھ گیا ہے ان ممالک میں کوئی بھی نوجوان آپ کو ایسا نہیں ملے گا جس کے ہاتھوں میں اسمارٹ فون یا ٹیبلیٹ نہ ہو۔
قارئین کرام! اسی سے ملتی جلتی کیفیت کچھ ہمارے بر صغیر پاک و ہند میں بھی ہوچکی ہے آج ہر جوان کے ہاتھ میں اسمارٹ فون نظر آتا ہے اور یہاں تک کہ خواتین و بچے بھی اس کام میں کسی صورت پیچھے نہیں ہیں اور ہمارا مشاہدہ تو یہ ہے کہ وہ کسان جو کھیت میں کام کررہا ہے اس کے ایک ہاتھ میں پھاوڑا اور دوسرے ہاتھ میں موبائل ہے۔
آج موبائل انسان کی اہم ضرورت شمار ہوتی ہے اور انٹرنیٹ انفارمیشن و اطلاعات کا اہم سورس بن چکا ہے لیکن اگر اسے صرف کام کے لئے استعمال کیا جاتا  لیکن افسوس یہ ہے کہ موبائل کام کے لئے نہیں تفریح کے لئے استعمال کیا جارہے اور اس کے لئے کسی طرح کی حد و حدود کا خیال بھی نہیں رکھا جارہا ہے بلکہ فضول کی سائیٹس اور یوٹیوب کے بے جا و بے حد استعمال سے عریانیت کو فروغ مل رہا ہے لہذا ابھی بھی وقت ہے ہم موبائل کا استعمال اپنے بچوں کی زندگی میں کم کریں اور انہیں تدریجی موت سے بچائیں۔


0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम