یادوں کا قبرستان اور جنگی مشین

چین کے وزیر خارجہ لیجیان ژاؤ نے امریکہ کی افغانستان سے ہنگامہ خیز روانگی پر طنز کرتے ہوئے اور ایک ویڈیو جاری کی جس میں طالبان  مبینہ طور پر امریکی فوجی طیارے کو جھولے کے طور پر استعمال کررہے ہیں۔

ولایت پورٹل:ہندوستان کی ریپبلکن انٹری تجزیاتی ویب سائٹ نے سلطنتی قبرستان  کی سرخی لگاتے ہوئے چین کی جانب سے امریکہ کا مذاق اڑتے ہوئے طالبان ذریعہ امریکی فوجی طیاروں کو جھولے کے طور پر استعمال کرنےکی ویڈیو نشر کی اور ایک تجزیے میں گزشتہ 20 سالوں میں افغانستان میں امریکی اقدامات کا جائزہ لیا۔
چین نے افغانستان سے امریکی انخلا کی ناکامی کو بیان کرتے ہوئے طنز کیا ،رپورٹ کے مطابق چینی عہدیدار نے اپنے ٹوئٹر پیج پر ویڈیو کا حوالہ دیتے ہوئے لکھا کہ افغانستان میں امریکہ کے چھوڑے گئے جنگی اوزار اتنے معمولی تھے کہ اب طالبان انہیں جھولے اور بچوں کے کھیلنے کے لیےاستعمال کرتے ہیں۔
رپورٹ کے مطابق جہاں چین نے افغانستان سے انخلا پر امریکہ پر کڑی تنقید کی ہے ، وہیں اس ملک نے طالبان کے زیر انتظام افغانستان کے لیے اپنی سفارتی اور مالی مدد کو بڑھا دیا ہے، چین افغان طالبان کی عبوری حکومت کی حمایت کے بعد افغانستان کے بارے میں وزرائے خارجہ کے اجلاس میں شرکت کرنے والے پہلے ممالک میں سے ایک بن گیا،واضح رہے کہ  چین نے افغانستان کے لیے 31 ملین ڈالر کی امداد کا اعلان کیا جو کہ امن اکی بحالی اوراس ملک میں افراتفری کے خاتمے کے لیے ایک ضروری قدم ہے۔
 چین کی سنہوا نیوز ایجنسی کے مطابق چینی وزیر خارجہ لیجیان ژاؤ نے کہا کہ چین افغانستان کو اناج ، سرمائی سامان ، ویکسین اور ادویات فراہم کرے گاجبکہ چینی وزارت خارجہ کے ترجمان وانگ وینبن نے یہ بھی کہا کہ طالبان کی نئی حکومت کے قیام نے افغانستان میں انتشار کا خاتمہ کر دیا ہے جو تین ہفتوں سے زائد عرصے تک جاری رہا۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین