Code : 2217 94 Hit

قزاقستان کی اپوزیشن میں امریکی ڈالر بولتے ہیں

قزاقستان کے سیاسی ماہرین کا کہنا ہے کہ اس ملک میں ہونے والے حالیہ مظاہروں کو مدنظر رکھتے ہوئے یہ کہا جاسکتا ہے کہ امریکہ نے اپوزیشن جماعتوں پر بھاری مقدار میں سرمایہ کاری کی ہے۔

ولایت پورٹل:قزاقستان کے سیاسی مسائل کے ماہرین نے اس ملک میں ہونے والے حالیہ مظاہروں کے پیش نظر یہ کہا ہے کہ امریکہ یہاں کی تمام سیاسی طاقتوں منجملہ ریڈیکل جماعتوں میں اپنا اثر و رسوخ بڑھانے کی کوشش کر رہا ہے،قزاقستان کے سیاسی مبصر مکسیم کازناچئی‌اف کا کہنا ہے کہ اس ملک میں مختلف تنظیم بنائی گئیں جن کے مغربی غیر سرکاری تنظیموں کے ساتھ بہت ہی گہرے روابط ہیں اور ان کا مقصد عوام پر اپنے اثر رسوخ کو بڑھانا تھا لیکن ابھی تک یہ حکومتی معاملات میں دخل اندازی کرنے میں ناکام رہے ہیں، انہوں نے مزید کہا کہ 28 سال سے امریکہ قزاقستان میں سرگرم تمام جماعتوں کے ساتھ رابطے میں ہے جس میں سے ایک گروہ ریڈیکل جماعت بھی ہے،وہ اس طریقے سے کوشش کر رہا ہے کہ حکومت کے اوپر اپنا اثر رسوخ اور دباؤ کو بڑھائے ،قزاق سیاسی مسائل کے ماہر نے مزید کہا کہ امریکی کے سفارتکار ہر ملک میں ایسا ہی طریقہ کار اپناتے ہیں ،یہ لوگ اکثر ممالک میں اپوزیشن لیڈروں کو فنڈنگ کرتے ہیں  مغربی پالیسی کے تحت کام کریں ،اس وقت قزاقستان کی سیاسی حالت اوکراین سے مشابہ ہوتی جارہی ہے،سیاسی مبصر نے مزید کہا  کہ  امریکہ ان تنظیموں کو بڑھاوا دینے کے لیے سرمایہ کاری کرتا ہے اور اگر حکومت کمزور ہوجاتی ہےتو ان تنظیموں کے نمائندے یہاں تک کہ ریڈیکل  جماعتوں سے منسلک سیاسی لوگ بھی بھی حکومت کا مقابلہ کرنے کے لیے اس کے خلاف  اٹھ کھڑے ہوجاتے ہیں۔
جیسا کہ آج کل امریکہ قزاقستان  میں اسی طریقہ کار پر عمل کر رہا ہے ۔



0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम