Code : 3796 3 Hit

فلسطین کے بارے میں ہمارا مؤقف کبھی نہیں بدلے گا:بادشاہ اردن

اردن کے بادشاہ نے صیہونی حکومت کے مغربی کنارے کے بڑے حصوں پر قبضہ کرنے کے منصوبے کے خلاف اپنے ملک کی مخالفت کا اعادہ کیا۔

ولایت پورٹل:اردنی نیوز ایجنسی پیٹرا کی رپورٹ کے مطابق شاہ اردن نے  امان میں واقع الحسینیہ پیلس میں فوجی عہدیداروں کی ایک بڑی تعداد سے ملاقات میں صیہونی حکومت کے مغربی کنارے پر قبضے کے منصوبے کی مخالفت پر مبنی اپنے ملک کے مؤقف کا اعادہ کیا۔
رپورٹ کے مطابق عبدللہ دوم نے مزید کہا کہ اردن فلسطینیوں کے مفادات کی حمایت جاری رکھے گا  اور مغربی کنارے کے الحاق کے بارے میں ہمارا مؤقف مستقل اور واضح ہے۔
اردن کے بادشاہ نے اس مقصد کو حاصل کرنے اور فلسطینیوں کی حمایت کے لئے متعدد عرب اور یوروپی ممالک کے ساتھ مستقل رابطوں کی بھی خبر دی۔
واضح رہے کہ صیہونی حکومت امریکہ کی حمایت سے فلسطین کے مغربی کنارے کا 30 فیصد قبضہ کرنے کا ارادہ رکھتی ہے۔
یادرہے کہ متعدد فلسطینی عہدیدار اور گروپ اس اقدام کوسینچری ڈیل نامی امریکی صہیونی فلسطین مخالف منصوبے کے ایک حصے کے طور پر دیکھ رہے ہیں، یہی وجہ ہے کہ وہ امریکہ اور اسرائیل کے ساتھ تعلقات منقطع کرنا چاہتے ہیں۔
یادرہے کہ تل ابیب کی کابینہ نے پہلے یہ وعدہ کیا تھا کہ یکم جولائی (بدھ) کو قبضے کے منصوبے پر عمل درآمد کی تاریخ ہوگی۔
تاہم وہ ایسا نہیں کرسکے اور اب کہہ رہے ہیں کہ شروع سے ہی یہ منصوبہ عمل درآمد کرنے کے لیے نہیں تھا بلکہ اس کو صیہونی وزیر اعظم بنیامین نیتن یاہوں سے سیاسی مقاصد حاصل کرنے کے ہتھیار کے طور استعمال کیا ہے۔
عبداللہ دوم نے کہا کہ فلسطین کے معاملے پر اردن کا مؤقف کبھی نہیں بدلے گا نیز انھوں نےمغربی کنارے کے مقبوضہ علاقوں میں الحاق پر مبنی کسی بھی یکطرفہ اسرائیلی کارروائی کی مخالفت کی۔





0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین