Code : 2577 64 Hit

اگر میں الیکشن جیت جاؤں گا تو نہ سعودی عرب کو دستخط شدہ سفید چیک دوں گا اور نہ ہی کم جونگ کو’’میں تم پر قربان ہوجاؤں‘‘ جیسا خط لکھوں گا:جو بائیڈن

امریکی ڈیموکریٹک پارٹی کے صدارتی امید وار کہنا ہے کہ اگر وہ انتخابات جیت جاتے ہیں تو سعودی عرب اور شمالی کوریا کے ساتھ تعلقات میں تبدیلی لائیں گے۔

ولایت پورٹل:رائٹر نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق سابق امریکی نائب صدر اور  2020 میں ہونے والے صدارتی انتخابات میں ڈیموکریٹک پارٹی کے صدارتی امیدوار جو بائیڈن نے سعودی عرب اور شمالی کوریا کے بارے میں ڈونلڈ ٹرمپ کی پالیسیوں پر تنقید کی ہے،بائیڈن کی انتخاباتی  مہم کے ترجمان کی جانب سے  رائٹرز کو بھیجے گئے ایک بیان میں  کہا گیا  ہے کہ ٹرمپ انتظامیہ نے سعودی حکومت  کو دستخط شدہ سفید چیک دے رکھا اور دنیا میں ہر جگہ ان کو  الگ کر اپنے اقدامات جاری رکھے ہیں،بیان میں مزید آیا ہے کہ اگر  بایڈن  امریکہ کے صدارتی انتخابات جیت جاتے ہیں  تو وہ سعودی عرب کے ساتھ اپنے تعلقات کا از سر نو جائزہ لیں گے تاکہ یہ یقینی بنایا جاسکے کہ یہ ملک امریکی اقدار اور ترجیحات کے ساتھ پوری طرح سے ہم آہنگ ہے یا نہیں ،بائیڈن کا خیال ہے کہ فلوریڈا میں ہونے والی فائرنگ کی تحقیقات کو اپنا راستہ طے کرنا چاہیے،بائیڈن کی انتخاباتی  مہم کے مرکزی دفتر سے جاری ہونے والے بیانیہ کی بنیاد پر  بائیدن کا کہنا ہے کہ ٹرمپ کی جانب سے  واشنگٹن-پیانگ یانگ کے تعلقات کو بہت اچھے قرار دینے کے بعد شمالی کوریا کے سوہی اڈے پر میزائل تجربہ  ٹرمپ کے منھ پر زور طمانچہ ہے،بیان میں شمالی کوریا کے رہنما کم جونگ ان کے ساتھ ٹرمپ کی تین روزہ ملاقات کو صرف ٹی وی شو کے لئے قرار دیتے ہوئے اس بات پر زور دیا گیا  ہےکہ ان  ملاقاتوں سے اب تک واشنگٹن کو کچھ بھی حاصل نہیں ہوا ہے کیونکہ پیانگ یانگ اپنی صلاحیتوں پر استوار ہے،بائیڈن کا کہنا ہے کہ اگر میں صدر بنوں گا تو کیم جونگ کو ’’میں تم پر قربان ہوجاؤں‘‘ جیسا خط نہیں لکھوں گا۔





0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम