آپ اپنے اندرونی مسائل حل کرنے پر توجہ دیں تو زیادہ بہتر ہوگا؛روس کا مغربی عہدیداروں کو مشورہ

روس کی وزارت خارجہ کی ترجمان نے مغربی عہدیداروں کو متنبہ کیا ہے کہ وہ الیکسی ناوالنی کی نظربندی کے بارے میں  مداخلت پسندانہ تبصرے کرنے کے بجائے اپنے اندرونی مسائل کے حل پر توجہ دیں۔

ولایت پورٹل:اسپوٹنک نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق روسی حکومت کے تنقید کنندہ الیکسی ناوالنی  کے ماسکو ایئر پورٹ پہنچتے ہی کی گرفتاری کے بعد امریکی  نو منتخب صدر جو بائیڈن کے قومی سلامتی کے مشیر جیک سلیوان نےروس کے اندرونی معاملات میں مداخلت کرتے ہوئے اپنے ایک ٹویٹر پیغام میں ناولنی رہائی کا مطالبہ کیا اور کہا کہ ناولنی  کو فوری طور پررہا کیا جائے اور اس روسی نقاد کی زندگی پر اس ظالمانہ حملے کے مجرموں کو انصاف کے کٹہرے میں لایا جائے، جیک سلیوان نے مزید کہا کہ مسٹر ناوالنی پر کرملن کا حملہ نہ صرف انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے بلکہ ان روسیوں کی بھی توہین ہے جو ان کی آواز کو سننا چاہتے ہیں۔
امریکی عہدہ دار کے مداخلت پسندانہ تبصرے کے جواب میں  روسی وزارت خارجہ کی ترجمان ماریا زاخارووا نے غیر ملکی عہدیداروں کو  خاص طور پر مغربی ممالک کے عہدہ داروں کو مشورہ دیا کہ وہ بین الاقوامی قوانین کی پاسداری کریں ، آزاد ممالک کے قومی قوانین کی خلاف ورزی نہ کریں  اور اپنے اندرونی مسائل کے حل پر توجہ دیں،قابل ذکر ہے کہ روسی حکومت کے نقاد ، الیکسی ناوالنی ، گذشتہ موسم گرما میں مبینہ طور پر زہر اگلنے کے بعد پہلی بار اتوار کے روز جرمنی سے روس روانہ ہوئے تھے تاہم جیسے ہی وہ ماسکو ہوائی اڈے پر پہنچے روسی پولیس نے انھیں حراست میں لے لیا، ماسکو جیل سروس نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ناوالنی کو ان کی معطل شدہ جیل کی سزا کی خلاف ورزی کرنے کے الزام میں حراست میں لیا گیا ہےاور وہ رواں ماہ ہونے والی عدالت کی سماعت تک پولیس  کی حراست میں رہیں گے۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین