Code : 3076 14 Hit

اسرائیل نیتن یاہو جیسے نسل پرست انسان کے ہاتھ میں ہے:امریکی سنیٹر

امریکی ڈیموکریٹک سینیٹر اور 2020 کے ڈیموکریٹک صدارتی امیدوار نےصیہونی وزیر اعظم نیتن یاہو کی نسل پرست حکومت پر کڑی تنقید کی۔

ولایت پورٹل:امریکی کانگریس کے ذرائع ابلاغ کی رپورٹ کے مطابق 2020 میں امریکی  صدارت کے لئے ڈیموکریٹک امیدوار اور ریاست ورمونٹ کے سینیٹر برنی سینڈرز نے صیہونی وزیر اعظم بنیامینن نیتن یاہو کو "رجعت پسند نسل پرست" قرار دیتے ہوئے تل ابیب حکومت کی پالیسیوں پر کڑی تنقید کی ہے۔
تاہم سینڈرز کو اپنے یہودی ہونے پر فخر بھی ہے۔
سینڈرز نے کہا  کہ مجھے یہودی ہونے پر بہت فخر ہے ، میں کچھ مہینوں تک اسرائیل میں رہا ہوں لیکن میں جو ابھی فی الحال  میں یقین کے ساتھ کہتا ہوں کہ بدقسمتی سے اسرائیل پر رجعت پسند نسل پرست نیتن یاہو کی حکومت ہے۔
یادرہے کہ اتوار کے روز  بھی سینڈرز نے امریکی اور اسرائیلی عوامی امور کمیٹی اے آئی پی اے سی کو بھی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ وہ اس  تنظیم کی سالانہ کانفرنس میں شرکت نہیں کریں گے ۔
سینڈرز نے ایک ٹویٹ میں اعلان کیا ہے کہ میں اے آئی پی اے سی میں ایسے لیڈر موجود ہیں جو تعصب کی وجہ سے فلسطینیوں کے  بنیادی حقوق کی کھلے عام مخالفت کرتے ہیں  جس  کی وجہ سے میں  تنظیم کی سالانہ کانفرنس میں شرکت نہیں کروں گا۔
سینڈرز نے مزید لکھا کہ اسرائیلیوں کو امن اور سلامتی کے ساتھ رہنے کا حق ہے لیکن یہی حق فلسطینی عوام کو بھی حاصل ہے ۔
میں ابھی بھی اے آئی پی اے سی کے ڈھانچے کے بارے میں فکرمند ہوں کیوں کہ یہ ان رہنماؤں کے لئے بنیاد فراہم کرتا ہے جو فلسطینی بنیادی حقوق کی کھل کر مخالفت کرتے ہیں اس لئے میں ان کی کانفرنس میں شرکت نہیں کروں گا ۔



0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम