Code : 2120 15 Hit

اگر میں الیکشن جیت جاؤں گا تو وادی اردن اسرائیل کا حصہ ہوگی:نیتن یاہو کی خام خیالی

صیہونی وزیر اعظم نیتن یاہو نے کہا کہ اگر مجھے آپ، اسرائیلی شہریوں سے واضح اکثریت حاصل ہوتی ہے تو آج میں اپنے مقصد کا اعلان کرتا ہوں کہ اگلی حکومت کے قیام کے ساتھ وادی اردن اور شمالی بحیرہ مردار پر اسرائیلی خودمختاری ہوگی۔

ولایت پورٹل:فرانسیسی خبررساں ادارے اے ایف پی کے مطابق ٹیلی ویژن پر خطاب کے دوران اسرائیلی وزیراعظم نے دوبارہ منتخب ہونے پر وسیع مغربی کنارے میں اسرائیلی بستیوں کے الحاق کے اپنے مقصد کے عزم کا اظہار کیا،اسرائیلی وزیراعظم کا کہنا تھا کہ وہ یہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی معاونت سے کریں گے کیونکہ توقع کی جارہی کہ ان کا طویل عرصے سے انتظار شدہ امن منصوبہ انتخابات کے کچھ وقت بعد سامنے آجائے گا،دوسری جانب فلسطینیوں نے اس بیان پر فوری ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ نیتن یاہو امن کے لیے کسی بھی کوشش کو نقصان پہنچا رہے ہیں جبکہ ان کے انتخابی حریف ان پر الیکشن سے ایک ہفتے قبل دائیں بازو کے قوم پرست ووٹوں کے حصول کے لیے مذموم کھیل کا الزام عائد کر رہے ہیں،اپنے خطاب میں نیتن یاہو کا کہنا تھا کہ ‘یہاں ایک جگہ ہے جہاں ہم انتخابات کے بعد فوری طور پر اسرائیلی خودمختاری کا اطلاق کرسکتے ہیں’،نیتن یاہو نے کہا کہ ‘اگر مجھے آپ، اسرائیلی شہریوں سے واضح اکثریت حاصل ہوتی ہے تو آج میں اپنے مقصد کا اعلان کرتا ہوں کہ اگلی حکومت کے قیام کے ساتھ وادی اردن اور شمالی بحیرہ مردار پر اسرائیلی خودمختاری ہوگی’،دوسری جانب اردن کے وزیرخارجہ ایمن صفدی نے خبردار کیا کہ یہ اقدام ‘پورے خطے کو تشدد کی طرف دھکیل دے گا’ اور ‘پورے امن عمل کے قتل’ کے خدشات ہیں،اسرائیلی وزیراعظم کے بیان پر ترکی کے وزیرخارجہ نے بھی اس پر سخت تنقید کرتے ہوئے نیتن یاہو کے عزم کو ‘نسل پرست’ قرار دیا۔

خیبر


0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम