عراقی سکیورٹی فورسز کے ہاتھوں موصل میں5 تکفیری دہشت گر دگرفتار

عراقی سکیورٹی فورسز نے موصل شہر میں انسداد دہشت گردی کاروائی کے دوران داعش کے پانچ دہشت گرد عناصر کی نشاندہی کی اور انہیں گرفتار کیا۔

ولایت پورٹل:المعلومہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق عراقی فوج کی جانب سے انسداد دہشت گردی کی کاروائیوں کا سلسلہ ملک کے مختلف حصوں میں جاری ہے، عراقی فورسز نے صوبہ نینوا میں تکفیریوں کے خلاف نیا آپریشن شروع کیا، رپورٹ کے مطابق  عراقی فورسز نے کاروائی کے دوران موصل شہر میں تکفیری دہشت گردوں کے ٹھکانوں کو تباہ کر دیا۔
سکیورٹی ذرائع نے بتایا کہ اس کاروائی میں 5 تکفیری عناصر کی نشاندہی کی گئی اور انہیں گرفتار کیا گیا ، اس سے قبل عراقی مسلح افواج کے ترجمان کا کہنا تھا کہ عراقی سکیورٹی فورسز نے گذشتہ ستمبر سے مختلف صوبوں میں تکفیری دہشتگردوں کے خلاف کاروائیوں کا ایک سلسلہ شروع کیا گیا تھا ان کاروائیوں کے دوران تکفیریوں کے متعدد ٹھکانوں کو تباہ کیا گیا۔
 عراقی مسلح افواج کے ترجمان نے کہاکہ ستمبر کے بعد سے ، داعشی تکفیری دہشت گردوں کے 17 رہنما  جو پہلے کئی صوبوں میں مطلوب تھے ، سکیورٹی فورسز کے ہاتھوں ہلاک ہوچکے ہیں،یادرہے کہ اگرچہ عراقی حکومت اس ملک سے داعش کے مکمل خاتمے کا اعلان کر چکی ہے تاہم اس دہشت گرد تنظیم کے باقی ماندہ عناصر عراق کے مختلف علاقوں میں آئے دن حملے کرتے رہتے ہیں اور ملک کی سیاسی اور سماجی شخصیات کو نشانہ بناتے رہتے ہیں۔
قابل ذکر ہے عراق میں دہشگردوں کو امریکہ اور دیگر کئی مغربی ممالک کی مکمل پشت پناہی حاصل ہے،اگرچہ امریکہ متعدد مغربی ممالک کا اتحاد بنا کر اس ملک میں داعش کا مقابلہ کرنے کے بہانے داخل ہوا تھا تاہم زمینی صورتحال کچھ اور ہی کہتی ہے کہ امریکہ نے یہاں دہشتگردوں کے لیے ایک سہلوت کار کے فرائض انجام دیے ہیں  جس میں انھیں اسلحہ کی فراہمی سے لے کر محاصرہ سے نکالنا تک شامل ہے۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین