Code : 3123 46 Hit

ایرانی سفیر کی ہندوستانی وزارت خارجہ میں طلبی

ایرانی وزیر خارجہ کے ہندوستانی مسلمانوں کی حمایت پر مبنی ایک ٹویٹ کرنے نئی دہلی میں تعینات ایرانی سفیر کو ہندوستانی وزارت خارجہ میں طلب کرلیا گیا۔

ولایت پورٹل:اسپوٹنیک نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق ایرانی وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے  ہندوستانی مسلمانوں کی حمایت پر مبنی ایک ٹویٹ کیا جس پر ہندوستانی حکومت کی جانب سے رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے  نئی دہلی میں تعینات ایرانی سفیر کو ہندوستانی وزارت خارجہ میں طلب کرلیا گیا۔
رپورٹ کے مطابق ہندوستانی وزارت خارجہ نے ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف کے اس ٹویٹ کی وجہ سے ایرانی  سفیر کو وزارت خارجہ طلب کیا ہے جس میں  انہوں نے ہندوستان میں مسلمانوں پر ہونے والے تشدد کی مذمت کرتے ہوئے اس اقدام کو ایک منظم سازش قرار دیا۔
یادرہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ نے ہندوستان میں مسلمانوں پر ہونے والے تشدد  پر اپنے رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے پیر کے روز ایک ٹویٹ میں لکھا کہ  ایران ہندوستان میں مسلمانوں کے خلاف منظم تشدد کی لہر کی مذمت کرتا ہے۔
انہوں نے مزید کہا کہ  ایران صدیوں سے ہندوستان کا دوست ہے۔
 ہم ہندوستانی حکام سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ تمام ہندوستانیوں کی خوشحالی کو یقینی بنائیں  اور اس بے وقوفانہ قتل و غارت گری کو جاری  رہنے کی ہرگز اجازت نہ دیں۔
ایرانی وزیر خارجہ نے ٹویٹ میں کہا کہ پرامن بات چیت اور قانون کی حکمرانی پر مبنی راستہ اختیار کرناچاہئے۔
یادرہے کہ ہندوستانی حکومت کی جانب سے مسلم مخالف شہریتی ترمیمی قانون کے نفاذ اور اس کے خلاف ہندوستانی عوام کے احتجاج کے بعد سے ہندوستانی مسلمانوں کے خلاف تشدد میں اضافہ ہوتا جارہا ہے۔
واضح رہے کہ حالیہ دنوں میں مسلمانوں پر ہندوؤں کے حملوں کی تصاویر کے منظر عام پر آنے سےاس قانون  کے خلاف ردعمل میں مزید شدت آئی ہے۔
 



0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین