Code : 2207 106 Hit

بغیر اجازت کے شام میں دراندازی کرنے والےفوجیوں کو فوری طوری پر وہاں سے نکل جانا چاہیے:ایرانی وزیر خارجہ

ایرانی وزیرخارجہ نے کہاہے کہ عالمی برادری کو چاہئے کہ وہ صیہونی حکومت کو شام کے خلاف جارحیت کا سلسلہ بند کرنے پر مجبور کرے۔

ولایت پورٹل:اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیرخارجہ محمد جواد ظریف نےاقوام متحدہ میں بحران شام کے بارے میں منعقدہ یورپی یونین کے اعلی رتبہ اجلاس میں کہا کہ شام کے خلاف اسرائیل کی جارحیتیں اس ملک کے حالات مزید پیچیدہ ہونے کا باعث بن رہی ہیں، انھوں نے کہا کہ وہ تمام غیر ملکی فوجی جو شامی حکومت کی اجازت کے بغیر اس ملک میں موجود ہیں فورا اس ملک سے نکل جائیں، وزیرخارجہ جواد ظریف نے شام میں جولان کی پہاڑیوں پر اسرائیل کے غاصبانہ قبضے کو تسلیم کرنے کے امریکی اقدام کو غیرقانونی اور غلط قرار دیا اور کہا کہ جولان شام کا ایک حصہ ہے،ایران کے وزیر خارجہ نے بحران شام کے سیاسی حل کے سلسلے میں کہا کہ ایران نے ہمیشہ تاکید کی ہے کہ بحران شام اس ملک کی سربراہی میں سیاسی عمل اور اقوام متحدہ کی مدد سے ہی حل ہوسکتا ہے، جواد ظریف نے آستانہ مذاکرات کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ حالیہ آستانہ اجلاس ، خودمختاری کی غیرقانونی جدت عمل سمیت دہشتگردی کے خلاف جنگ کے بہانے کسی بھی نئے حقائق کو جنم دینے کی کوشش کو مسترد کرتا ہے،ایران کے وزیرخارجہ نے  کہا کہ ایران ، آئندہ آستانہ اجلاس میں شام میں امن و ثبات قائم کرنے میں مدد کرے گا۔
سحر


0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम