Code : 2940 84 Hit

ایران ایک عام ملک کی طرح رہے:امریکی وزیر جنگ

امریکی وزیر دفاع نےاطالوی وزیر دفاع کے ساتھ مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ واشنگٹن چاہتا ہے کہ ایران ایک عام ملک کی طرح برتاؤ کرے۔

ولایت پورٹل:امریکی وزیر دفاع مارک ایسپر نے جمعہ کو اٹلی کے وزیر دفاع لورینزو گورینی کے ساتھ مشترکہ پریس کانفرنس میں ایران سے ایک عام ملک کی طرح برتاؤ کرنے کی اپیل کی ہے۔
انہوں نے پریس کانفرنس کے دوران مزید کہا کہ داعش مخالف اتحاد کے ذریعے ہم عراق کے استحکام اور خودمختاری اور داعش کی مستقل شکست کے لئے مل کر کام کرتے رہیں گے۔
اسپیئر نے مزید کہا کہ ہم اٹلی سمیت اپنے شراکت داروں اور اتحادیوں کی حوصلہ افزائی کرتے ہیں کہ وہ اتحادی تیاریوں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں ، اور ایک مضبوط نیٹو کے لئے دفاعی بجٹ میں جی ڈی پی کا 2٪ مختص کرنا کل کی دھمکیوں کے لئے تیار رہنے کے لیے نہایت اہم ہے۔
اطالوی وزیر دفاع نے  بھی  پریس  کانفرنس میں  کہا کہ انھوں نے امریکہ  کے ساتھ مذاکرات کے بعد عراق میں رہنے کا فیصلہ کیا ہے۔
انہوں نے لیبیا کے بحران کا بھی ذکرکرتےہوئے کہا کہ غیر ملکی طاقتوں کی موجودگی لیبیا کی اس صورتحال کا باعث بنی ہے اور لیبیا بحران کا سیاسی حل  کے علاوہ دوسرا کوئی راہ حل نہیں ہے۔
یادرہے کہ لیبیا میں اس وقت دو حکومتیں ہیں ، ایک مشرقی لیبیا میں طُبرُق پارلیمنٹ اور دوسری ملک کے مغرب میں طرابلس (دارالحکومت) میں قومی اتحاد کی حکومت ، جہاں مشرقی لیبیا  کی حکومت کو سعودی عرب ، مصر ، متحدہ عرب امارات ، فرانس اور روس کی حمایت حاصل ہے جبکہ  طرابلس میں حکومت کو  ترکی ، قطر اور اٹلی کی حمایت  حاصل ہے ۔
واضح رہے کہ اقوام متحدہ نے طرابلس میں قائم فائز السراج کی سربراہی میں قومی اتحاد کی حکومت کو تسلیم کیا  ہے جبکہ  مشرق میں عسکریت پسند سعودی عرب اور مصر کے بل بوتے دارالحکومت پر قبضہ کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔
 


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین