ایران خطے کے استحکام کا اہم عامل ہے:ممتاز لبنانی سیاستداں

لبنان کے ممتاز سیاستدان نے اپنے ایک خطاب میں اسلامی جمہوریہ ایران کو خطے میں استحکام کے عوامل میں سے ایک قرار دیا۔

ولایت پورٹل:المیادین چینل کی رپورٹ کے مطابق  ایک ممتاز لبنانی سیاست دان اور لبنانی ڈیموکریٹک پارٹی کے رہنما طلال ارسلان نے کہا کہ بیروت کے الطیونہ ضلع میں گزشتہ جمعرات کے واقعات کا ذکر کیا، رپورٹ کے مطابق ارسلان نے اس سلسلے میں کہاکہ  سکیورٹی فورسز کی تحقیقات سے پتہ چلتا ہے کہ الطیونہ کا واقعہ پہلے سے منصوبہ بند تھا۔ اس مسئلے کو بنیادی طور پر حل کیا جانا چاہیے،دوسری صورت میں اس طرح کے واقعات پھر دہرائے جاسکتے  ہیں۔
 لبنانی ڈیموکریٹک پارٹی کے رہنما نے کہاکہ الطیونہ میں جو کچھ ہوا اس سے مختلف جماعتوں کے پرامن بقائے باہمی کو خطرہ ہےتاہم  لبنانی حزب اللہ کے سکریٹری جنرل سید حسن نصر اللہ کی دور اندیشی نے خانہ جنگی کو روک دیا ہے۔
 طلال ارسلان نے اپنی تقریر کے ایک اور حصے میں خطے میں اسلامی جمہوریہ ایران کے کردار کا حوالہ دیتے ہوئےکہا کہ  ایک حقیقت ہے اور وہ یہ ہے کہ ایران خطے میں استحکام کے عوامل میں سے ایک ہے، قابل ذکر ہے کہ گذشتہ جمعرات کو سمیر جعجع کی قیادت میں لبنانی فورسزپارٹی سے وابستہ جنگجوؤں نے بیروت میں حزب اللہ اور امل تحریک کے حامیوں پر حملہ کر کے متعدد افراد کو شہید کر دیا تھا۔
 آج صبح روئٹرز نے باخبر ذرائع کے حوالے سے اطلاع دی ہے کہ لبنانی فورسز پارٹی کے سربراہ سمیر جعجع کو بیروت کے الطیونہ ضلع میں ہونے والےحالیہ واقعات کے بعد ملٹری ٹریبونل میں طلب کیا گیا ہے۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین