Code : 1827 18 Hit

برطانوی آئل ٹینکر کو روکنے کا مقصد بحری جہاز رانی کے بین الاقوامی قوانین کا نفاذ ہے:ایرانی وزیر خارجہ

ایران کے وزیر خارجہ نے برطانیہ کو نصیحت کی کہ وہ اقتصادی دہشت گردی میں امریکا کا ساتھ دینے سے دستبردار ہوجائے۔

ولایت پورٹل:اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیرخارجہ نے کہا ہے کہ آبنائے جبل الطارق میں ہونے والی سمندری ڈکیتی کے برخلاف خلیج فارس میں برطانوی آئل ٹینکر کو روکنے کے ایران کا اقدام کا مقصد بحری جہاز رانی کے بین الاقوامی قوانین کا نفاذ ہے،ایران کے وزیرخارجہ ڈاکٹر محمد جواد ظریف نے ہفتے کو اپنے ٹویٹر پیج پر لکھا کہ ایران خلیج فارس اور آبنائے ہرمز کی سیکورٹی کو یقینی بناتا ہے ، انہوں نے برطانیہ کو نصیحت کی کہ وہ اقتصادی دہشت گردی میں امریکا کا ساتھ دینے سے دستبردار ہوجائے،ایران کی سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی نے جمعہ کی شام جنوبی صوبہ ہرمزگان کے شپنگ اور پورٹ کے محکمے کی درخواست پر برطانوی آئل ٹینکر اسٹینا ایمپیرو کو ایک ایرانی ماہیگیر کشتی کو ٹکر مارنے اور جہاز رانی کے دیگر قوانین کی خلاف ورزی کرنے کی بنا پر روک لیا،ایران کی سپاہ پاسداران نے یہ اقدام ایک ایسے وقت کیا ہے جب برطانوی بحریہ نے گذشتہ چار جولائی کو آبنائے جبل الطارق میں ایک ایرانی آئل ٹینکر کو شام کے خلاف یورپی یونین کی پابندی کی رعایت نہ کرنے کے بہانے روک لیا اور گذشتہ روز اس کو روک رکھنے کی مدت میں مزید توسیع کردی ۔
سحر


0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम