Code : 2516 42 Hit

شام میں ہم نے اکیلے داعش کو شکست دی ہے:ترکی کے صدر کا عجیب دعوی

ترکی کے صدررجب طیب اردگان نے انقرہ کے لئے نیٹو کی حمایت بڑھانے کا مطالبہ کرتے ہوئے دعوی کیا کہ انھوں نےاکیلے شام میں داعش کو شکست دی ہے۔

ولایت پورٹل:ٹی آر ٹی نیوز ایجنسی  کی رپورٹ کے مطابق ترکی کے صدر رجب طیب اردگان نے آج لندن میں نیٹو کے سربراہی اجلاس میں شرکت کرنے  کے لیے روانگی سے قبل تقریر کرتے ہوئے کہا کہ  نیٹو کے ممبر ممالک کو ترکی کی زیادہ زیادہ سے  حمایت کرنا چاہیے،انھوں نے کہا کہ ترکی نیٹو کا اٹوٹ رکن ہے اور اس نے کئی ممالک سے زیادہ اس  اتحاد کی حمایت کی ہےلہذا اس کو نظرانداز نہیں کیا جاسکتا،ترک صدر نے دعوی کیاہے کہ کچھ ممالک ترکی کی نیٹو کی رکنیت کو پامال کرنے کی کوشش کرتے ہیں جبکہ ترکی  وہ واحد ملک ہے جس نے شام میں داعش سےاکیلے جنگ  لڑی اور  اس کوشکست دی ہے،اردگان نے یہ کہتے ہوئے  کہ انہیں امید ہے کہ نیٹو ہمارے ساتھ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں شامل ہوگا ،مزید کہا کہ وہ لندن کے اجلاس میں شام اور لیبیا سمیت علاقائی معاملات کے بارے میں مشاورت کریں گے،انہوں نے موجودہ خطرات کے پیش نیٹو باڈی کی تجدید کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ نیٹو کو خطرات سے نمٹنے کے لئے اپنی طاقت میں اضافہ کرنا چاہئے تاکہ اس کے ممبر ممالک  متبادل اتحاد کا سہارا نہ لینا پڑے،شام کا ذکر کرتے ہوئے اردگان نے کہا کہ وہ شام کے بارے میں برطانوی ، جرمن اور فرانسیسی رہنماؤں کے ساتھ بات چیت کریں گے ، اور شمالی شام میں ایک "سیف زون" کا مسئلہ تینوں ممالک کے ساتھ ہونے والی بات چیت کا مرکز ہوگا،ترک صدر نے مزید کہا کہ اگر نیٹو  ترکی کو دھمکیاں دینے والے دہشت گرد گروہوں کو دہشتگرد قرار نہیں دیتا ہے توہم  بالٹک منصوبے کے سلسلہ میں  اپنا موقف تبدیل نہیں کریں گے۔




0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین