Code : 4102 3 Hit

الکاظمی کے امریکہ سفر کی اولین ترجیح عراق سے امریکی فوجیوں کا فوری انخلا ہونا چاہیے:سائرون

عراقی پارلیمانی اتحاد سائرون کے نمائندے نے زور دے کر کہا کہ عراقی وزیر اعظم کے دورہ امریکہ کے دوران قابض امریکی افواج کو فوری طور پر ملک سے بے دخل کرنے کا کام طے کیا جانا چاہیے۔

ولایت پورٹل:المعلومہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق عراقی پارلیمانی اتحاد سائرون کے نمائندے امجد العقبی نے وزیر اعظم مصطفی الکاظمی سے مطالبہ کیا کہ وہ ملک میں امریکی دہشت گرد قوتوں کی موجودگی کو برداشت نہ کریں، انہوں نے کہا کہ  الکاظمی کے دورہ امریکہ کے دوران متعددامور کو واضح کرنے کی ضرورت ہے جن میں سب سے اہم مسئلہ امریکی قابض فوج کو عراق سے فوری طور پر بے دخل کرنا ہے، انہوں نے مزید کہا کہ اس سفر کے دوران الکاظمی کو اپنی حکومت کی ترجیحات میں ملکی مفادات کو اولین ترجیح میں رکھنا چاہئے  اور وزارت خارجہ نے اس سلسلے میں ایک کمیٹی بھی تشکیل دی ہے۔
عراقی نمائدہ نے مزید کہا  کہ سائرون اتحاد جلد سے جلد قابضین کو ملک بدر کرنے کی حمایت کرتا ہے تاکہ عراقی خودمختاری بحال ہوسکے، اس سلسلے میں  الفتح اتحاد کے نمائندے "محمد کریم" نے بھی کہا کہ الکاظمی اپنے آئندہ دورے کے دوران امریکہ کو یہ پیغام دیں گے کہ عراق بین الاقوامی اور علاقائی تنازعات کا مرکز نہیں ہوگا ۔
انہوں نے کہا کہ ٹرمپ کے ساتھ اپنی ملاقات کے دوران ، الکاظمی امریکی فوجیوں کی سربراہی میں  غیر ملکی فوجیوں کو ملک سے نکالنے کے پارلیمنٹ کے فیصلے کی پاسداری کریں گے،واضح رہے کہ الکاظمی امریکی حکام بالخصوص ڈونلڈ ٹرمپ سے ملاقات کے لئے سرکاری دورے پر اگلے ہفتے امریکہ کا دورہ کرنے والے ہیں جس میں عراقی عوام کا سب سے اہم مطالبہ عراق سے غیر ملکی افواج خصوصا امریکی فوجیوں کا انخلاء ہے ، ایک کے اندازے کے مطابق عراق میں 6000 سے 9000 امریکی فوجی موجود ہیں۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین