امام خمینی نے انقلاب کے پہلے ہی دن فلسطین کو اسلام کا سب سے اہم مسئلہ قرار دیا:ایرانی جنرل

ایرانی سپاہ پاسداران نائب سربراہ جنرل فدوی کا کہنا ہے کہ فلسطین اسلام اور انقلاب کا سب سے پہلا مسئلہ تھا، ہے اور رہے گا۔

ولایت پورٹل:سپاہ پاسداران کے ڈپٹی کمانڈر انچیف جنرل فدوی نےکہا کہ امام خمینی نے اپنی اسلامی تحریک کے پہلے ہی دن فلسطین کو اسلام کا سب سے اہم مسئلہ قرار دیا اور اپنے حملے کی نوک کو صہیونی رجیم اور شیطان بزرگ امریکہ کی جانب کیا،انہوں نے کہا کہ اہل حق آگے کی جانب بڑھ رہے ہیں کیونہ انہوں نے اللہ تعالیٰ کے احکامات پر عمل کیا ہے، انہوں نے سوالیہ انداز میں پوچھا کیا ان طویل سالوں کے دوران اللہ تعالیٰ نے اپنے وعدوں پر عمل نہیں کیا؟ کیا فلسطین کے عوام دس سال پہلے جیسے ہیں؟
جنرل فدوی کا کہنا تھا کہ باطل قوتیں اہل حق کی شرائط ماننے پر مجبور ہیں، حالیہ تین دنوں میں صہیونی شیطانوں نے اپنے احقمانہ اقدام کی وجہ سے ایک مرتبہ پھر شکست کا مزا چکھا،انہوں نے کہا کہ جس طرح آیت اللہ خامنہ ای نے کہا اور شہید سلیمانی نے فلسطینیوں کے ہاتھ بھرے، یہ سلسلہ دائمی ہے اور اسلامی انقلاب کی سپاہ ہمیشہ ان کے ہاتھ بھرتی رہے گی، یہ ہماری ذمہ داری ہے اور ہم اپنی ذمہ داری پر ہمیشہ کی طرح عمل کرتے رہیں گے ،اہل حق کو کامیابی اللہ تعالیٰ عطا کرے گا، نتیجہ اللہ تعالیٰ کے ہاتھ میں ہے جبکہ بعض ملکوں کی جانب سے اس قرآنی اصول کے نہ سمجھنے پر تعجب ہے۔  
جنرل فدوی نے زور دے کر کہا کہ فلسطین اسلام اور انقلاب کا سرفہرست مسئلہ تھا، ہے اور رہے گا اور اسرائیل کی نابودی تک رہے گا، انہوں نےکہا کہ ہم نے دیکھا کہ مغربی کنارہ بھی غزہ کی طرح کھڑا ہوگیا ہے، ان شاء اللہ یہ قیام کامل ہوں اور صہیونیوں کے خوف کو بڑھائیں تاکہ ہم ان کے زوال اور صفحہ ہستی سے مٹنے دیکھ پائیں۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین