Code : 2215 100 Hit

پابندیاں بوؤ گے تو حسرت اور مایوسی ہی کاٹنا پڑے گی؛حزب اللہ کا امریکہ سے خطاب

حزب اللہ کی ایگزیکٹیو کمیٹی کے ایک ممبر نے اس تنظیم پر امریکہ کی جانب سے لگائی جانے والی پابندیوں کے بے اثر ہونے کے بارے میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ان پابندیوں کا نتیجہ واشنگٹن کی مایوسی کی شکل میں سامنے آیا ہے۔

ولایت پورٹل:حزب اللہ کی مرکزی کمیٹی کے رکن نبیل قاووق نے امریکہ کی جانب سے اس تنظیم پر لگائی جانے والی پابندیوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ دشمن جب فوجی اور تکفیری ہتھکنڈوں سے مایوس ہو گیا تو اس نے اقتصادی جنگ شروع کی،انہوں نے مزید کہا کہ اقتصادی پابندیاں ممکن ہے بعض افراد کو امریکہ کے سامنے سر جھکانے پر مجبور کر دیں لیکن جس کے دل میں عشق حسین ہے وہ اس اقتصادی دہشت گردی سے ہرگز نہیں ڈرے گا وہ لوگ ہمیں جانتے نہیں ہیں ، یہ پابندیاں ان کے لئے صرف حسرت اور مایوسی ہی کی شکل میں ظاہر ہوں  گی ،انھوں نے آگے چل کر کہا باوجود اس کے کہ بعض تنظیموں اور افراد ی بلکہ پوری قوم کے اوپر پر دباؤ پڑا ہے لیکن یہ پابندیاں ہمیں ہمارے ارادے سے پیچھے نہیں ہٹا سکتی ہیں اور نہ ہی ہمارے موقف کو بدل سکتی ہیں ہم ان تمام سختیوں اور مصیبتوں کے باوجود اپنے راستے کو جاری و ساری رکھیں گے اور لگاتار کامیابی کی طرف قدم بڑھاتے رہیں گے۔
انہوں نے اقوام متحدہ میں لبنان کے صدر کی تقریر کو شجاعت سے لبریز قرار دیتے ہوئے کہا کہ امریکی پابندیوں کو لے کر ہمارے ملک میں کسی بھی طرح کے اختلافات نہیں پائے جاتے ہیں جو امریکہ کی پستی اور کمزوری  کو ثابت کرتی ہیں ۔
قابل ذکر ہے کہ حال ہی میں امریکی وزارت خزانہ نے لبنان کی جمال  فاؤنڈیشن پر یہ کہتے ہوئے پابندی عائدکردی کہ یہ حزب اللہ کے لیے ٹرانزیکشن کا کام کرتے ہیں اور انہیں پابندیوں کی لسٹ میں قرار دیا نیز امریکہ مزید پابندیاں لگانے کے درپے ہے اسی سلسلے میں کچھ ہی دن پہلے امریکی وزیر خزانہ نے کہا کہ ہم لبنان میں حزب اللہ کے حامیوں کے ساتھ سختی سے پیش آئیں گے۔



0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम