Code : 2666 11 Hit

مجھ سے زبردستی کسی کو وزیر اعظم بنانے کے لیے کہا تو عہدہ چھوڑدوں گا؛عراقی صدر کی دھمکی

عراقی پارلیمنٹ میں اکثریتی دھڑے کی جانب سے وزیر اعظم کے لئے نامزدگی کا اعلان کرنے کے چند گھنٹے بعد ہی عراقی صدر کے قریبی ذرائع نے دعوی کیا ہے کہ برہم صالح شاید استعفی دے دیں گے۔

ولایت پورٹل:عراقی نیوز ایجنسی المیادین کی رپورٹ کے مطابق عراق کے صدربرہم  صالح نے اشارتاً  کہا ہے کہ اگر وزیر اعظم کی نامزدگی کے لیے ایسے شخص کا نام تھونپا جائے جس کو عراقی عوام نہیں مانتے تو وہ عہدہ چھوڑنے کے لئے تیار ہیں،رپورٹ کے مطابق عراقی ذرائع کے مطابق ، عراقی صدر تین شرائط پر اکثریتی دھڑے کی نامزدگی کا تعین کرنے کے لئے پارلیمنٹ سے باضابطہ جواب کے منتظر ہیں،یادرہے کہ البناء اتحاد  عراقی  صدر کے نام خط لکھا ہے  جس میں ان پر زور دیا گیا ہے کہ قصی السهیل وزیر اعظم کے لیے  نامزد کریں،البناء کا کہنا ہے کہ ان کا  اتحاد اکثریتی دھڑا ہے اور اس کے امیدوار کو پارلیمنٹ میں ووٹ کے لئے نامزد کرنا ہوگا،یاد رہے کہ عراقی پالیمنٹ کی جانب سے وزیر اعظم نامزد کرنے کے  لیےبرہم صالح کو دیے جانےوالے پندرہ دن کے ختم ہوتے ہی عراقی آئین کی شق76پر اختلافات بڑھ گئے ہیں جس کے پیش نظرصالح نے آئینی عدالت سے اس شق کی مزید تفصیلات بیان کرنے کی اپیل کی ہے۔

 

0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम