داعش کا الحشد الشعبی کی سرحدی چوکیوں پر راکٹ حملہ

شامی ہیومن رائٹس واچ نے عراق اور شام کی سرحد پر واقع الحشد الشعبی کی چوکیوں پر داعش کے حملے کی خبر دی ہے۔

ولایت پورٹل:الاخباریہ نیوز ویب سائٹ کی رپورٹ کے مطابق شام میں حزب اختلاف سے وابستہ کمیٹی شامی ہیومن رائٹس واچ نے آج اعلان کیا ہے کہ داعشی دہشتگردوں نے صحرائی علاقوں میں پیش قدمی کرتے ہوئے البوکمال شہر کے نواح میں واقع عباس گاؤں میں ایران نواز تنظیم الحشد الشعبی کی چوکیوں پر راکٹ داغے ہیں،مذکورہ کمیٹی  نے بتایا کہ رواں سال کے آغاز سے ہی نامعلوم ڈرونوں نے شام اور عراق کی سرحدوں کے قریب البوکمل کے علاقے میں متعدد بار الحشد الشبعی کے فوجی ساز و سامان اور چوکیوں کو نشانہ بنایا ہے،10 جنوری کو الحشد الشعبی کے خلاف ہونے والے حملے میں صرف اس علاقے میں موجود کم از کم 8 افرادہلاک ہوگئے تھے،ہیومن رائٹس واچ کے مطابق  الحشد الشعبی فورسز کو مجبور ًاپنے بھاری ہتھیاروں کو دریائےفرات کے اطراف اور آس پاس کے باغات میں منتقل کرنا پڑا تاکہ  امریکی حملوں سے بچ سکیں،یادرہے کہ امریکی لڑاکا طیاروں نے 8 جنوری کو شام کی سرحد پر واقع الحشد الشعبی تنظیم سے وابستہ حزب اللہ کے کئی صدر دفاتر پر بمباری کی اور امریکی محکمہ دفاع نے ایک بیان جاری کرتے ہوئے اس حملے کی تصدیق بھی کی،الحشد الشعبی ذرائع نے اعلان کیا کہ اس حملے میں کم از کم 28 افراد ہلاک اور 51 دیگر زخمی ہوئے ۔



0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین