Code : 3414 21 Hit

عراق میں داعشی عناصر انسداد دہشت گردی کارروائیوں سے بچنےکی کوششوں میں مصروف

ایک عراقی فوجی عہدیدار نے کہا ہے کہ داعش کے دہشت گرد عناصر نے صوبہ دیالی میں نگرانی کے کیمرے غیر فعال کردیے ہیں تا کہ الحشد الشعبی اور فوج کی انسداد دہشت گردی کارروائیوں سے بچ سکیں۔

ولایت پورٹل؛عراقی سرکاری نیوز ایجنسی واع کی رپورٹ کے مطابق عراقی مشترکہ آپریشنز کمانڈ کا کہنا ہے کہ داعش کے باقیماندہ عناصر نے ان کے خلاف انسداد دہشت گردی کی کارروائیوں کی کامیابی کے بعد صوبہ دیالی میں نگرانی کے کیمرے تباہ کردیئے ہیں۔
آپریشن کمانڈ کے ترجمان تحسین الخفاجی نے کا کہنا ہے  کہ داعشی دہشت گرد عناصر کے اقدام سے سکیورٹی فورسز کی طاقت اور دہشت گردی کے انسداد کے لئے ان کی انٹیلیجنس کوششوں کا پتہ چلتا ہے۔
انہوں نے کہا کہ تباہ شدہ کیمرے عراق کے اندر مرمت کے بعد اپنے سابقہ مقامات پر واپس لگادیےجائیں گے۔
اس سلسلہ میں لبنان کے المیادین ٹی وی چینل نے عراق میں کرد ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ داعش دہشت گرد گروہ کے عناصر ایسے علاقوں پر حملہ کرنے کی تیاری کر رہے ہیں جن میں عراقی وفاقی فوج اور کرد پیشمرگہ فوج کے مابین ضروری ہم آہنگی کا فقدان ہے۔
عراقی کرد عہدیدار کا کہنا ہے کہ پچھلے چھ ماہ سے داعش کا خطرہ بڑھ چکا ہے۔
انھوں نے مزید کہا کہ  عراق کے نئے نامزد وزیر اعظم مصطفی الکاظمی کو کابینہ کی تشکیل کے لئے بہتر ہوگا کہ وہ عادل عبدالمہدی کی  عبوری حکومت کی موجودہ کابینہ کو اپنی کابینہ میں برقرار رکھیں۔
یادرہے کہ  حالیہ دنوں میں کورونا وائرس پھیلنے کے پیش نظر متعددعراقی شہروں اور صوبوں میں لاک ڈاؤن کیا گیا ہے کہ جس کا فائدہ اٹھاتے ہوئے ملک کے کچھ صوبوں جیسے کرکوک ، صلاح الدین اور دیالی حملے کیے ہیں تاہم عراقی فوج اور الحشد الشعبی کی انسداد دہشت گردی کی مشترکہ  کاروائیوں کے بعد داعش کے باقی ماندہ عناصر کو جان کے لالے پڑ گئے ہیں۔



0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین