Code : 2401 54 Hit

داعش کے حملے پھر سے شروع ہونے والے ہیں: دار الفتویٰ مصر

مصر کے دار الفتویٰ نے اعلان کیا ہے کہ ابوبکر البغدادی کی ہلاکت کے بعد داعش کی دہشتگردانہ کاروائیاں بڑھنے کے امکانات پائے جاتے ہیں۔

ولایت پورٹل:مصر کے دار الفتویٰ سے منسلک انتہا پسندانہ عقائد اور  تکفیری فتووں کے آبزرویشن سینٹر نے آن ایک بیانیہ جاری کرتے ہوئے لکھا ہے کہ  ابوبکر البغدادی کی ہلاکت کے بعد داعش کی دہشتگردانہ کاروائیوں میں شدت آنے کے خدشات پائے جاتے ہیں،مصر کی القرار العربی ویب سائٹ نے لکھا ہے کہ بیانیہ میں آیا ہے کہ مالی میں دہشت گرد تنظیمیں تخریبی کاروائیاں کرنے کے یے منظم ہورہی ہیں ،دار الفتویٰ نے انتباہ دیا ہے کہ البغدادی کے مرنے کے بعد داعش بھی اپنی کھوئی ہوئی طاقت کو بحال کرنے کے لیے خونریز اور وسیع پیمانہ پر دہشتگردانہ کاروائیاں کرنے کے منصوبے بنا رہی ہے،مصر کی اس مذہبی تنظیم نے تمام ممالک سے دہشتگردی کے خلاف متحد ہونے اور ہر سطح پر داعش کا قلع قمع کرنےکی ضرورت پر تاکید کی ہے،یہ بیانیہ ایسے وقت میں جاری کیا گیا ہے جبکہ کل داعش نے مالی  کے شمال مشرقی علاقہ میں اس ملک کی فوج پر ہونے والے ایک خونریز حملہ کی  ذمہ داری قبول کی،مالی کے عہدہ داروں کے مطابق جمعہ کے دن اس ملک کے فوجی مرکز میں ہونے والے بم دھماکہ میں کم سے کم 53فوجی اور ایک عا م شہری جاں بحق جبکہ متعدد زخمی ہوگئے،جاں بحق ہونے والوں میں فرانس کا ایک فوجی بھی ہے۔


0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम