Code : 3394 41 Hit

بن سلمان کے خلاف بولنے پر مجھےقتل کی دھمکی دی گئی:سعودی سماجی کارکن

برطانیہ میں مقیم ایک سعودی خاتون سماجی کارکن نے کہا ہے کہ انہیں سعودی ولی عہد کے منصوبے کے خلاف بولنے پر جان سے مارنے کی دھمکی دی گئی ہے۔

ولایت پورٹل:وطن اخبار کی رپورٹ کے مطابق  برطانیہ میں مقیم سعودی سماجی کارکن علیاء ابوتایه الحویطی کا کہناہے کہ انھوں نے سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کے نیوم شہر کے منصوبے خلاف بیان دیا جس کے  بعد انھیں جان سے مارنے کی دھمکی دی گئی۔
انہوں نے مزید کہاکہ مجھے فون کیا گیا ہے اور کچھ لوگوں نے مجھے جان سے مارنے کی دھمکی دیتے ہوئے کہا کہ آپ کو لگتا ہے کہ آپ انگلینڈ میں لہذا محفوظ ہیں اور ہم آپ تک نہیں پہنچ سکتے ہیں!
الحویطی نے کہاکہ مجھے ٹویٹر پر یہ دھمکی بھی دی گئی ہے کہ میرا حشر بھی جمال خاشقجی کی طرح کر دیا جائے گاتا ہم  میں نے ان دھمکیوں کے بارے میں برطانوی پولیس سے بات کی ہے۔
واضح رہے کہ سعودی حکومت کو اس وقت ولی عہد محمد بن سلمان کے منصوبوں  کے خلاف سعودی عوام کی بے مثال مزاحمت کا سامنا ہے۔
یادرہے کہ شمال مغربی سعودی قبائل خصوصا الحویطات قبیلے کے اکثر افراد نے کہا ہے کہ وہ بن سلمان کے منصوبے کو عملی جامہ پہنانے اور اس علاقہ میں ایک بڑا شہر تعمیر کرنے کے لئے اپنے گھروں کو ہرگزنہیں چھوڑیں گے۔
قابل ذکرہے کہ  بن سلمان نے 2017 میں اعلان کیا تھا کہ وہ سعودی عرب کے 2030 کے ویژن کے دائرہ کار میں ایک جدید شہر تعمیر کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں جو  بیلجیم کے سائز کے برابر ہوگا  لیکن انھوں نے  نیو م شہر کے لئے اس جگہ  کا انتخاب کیا جہاں الحویطات قبیلے کے 20000 افراد رہتے ہیں۔
واضح رہے کہ بن سلمان نے علاقے میں مکانات خالی کرنے اور شہر کی تعمیر کا عمل شروع کرنے کے لئے طاقت کا استعمال کرنے کا ارادہ کیا ہے لیکن انھیں رہائشیوں کی غیرمعمولی مزاحمت کا سامنا کرنا پڑا ہے۔
 
 


0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम