صیہونی جیلوں میں سیکڑوں بیمار فلسطینی قیدی

فلسطینی قیدیوں اور آزادہونے والے افرادکے امور کی  نگراں کمیٹی کے ریسرچ سیکشن کے سربراہ نے کہا کہ اسرائیلی جیلوں میں 600 سے زائد بیمار قیدی ہیں جن میں سے درجنوں کو کینسر جیسی خطرناک بیماری ہے۔

ولایت پورٹل:المیادین چینل کی رپورٹ کے مطابق فلسطینی قیدیوں اور آزادہونے والے افرادکے امور کی  نگراں کمیٹی کے تحقیقاتی شعبے کے سربراہ عبدالناصر فروانہ نے کہا کہ اسرائیلی جیلوں میں 600 سے زائد فلسطینی قیدی بیمار ہیں۔
رپورٹ کے مطابق انہوں نے بتایا کہ درجنوں افراد دل کی بیماری، گردے کی خرابی اور کینسر جیسی خطرناک بیماریوں میں مبتلا ہیں یا فالج کا شکار ہیں اور ان میں سے کچھ دوسروں کی مدد کے بغیر چلنے کے قابل بھی نہیں ہیں۔
 انہوں نے کہا کہ یہ وہ لوگ ہیں جن میں بیماری کی علامات پائی جاتی ہیں اور ان میں بیماری کی تشخیص ہوئی ہے جبکہ اگر تمام قیدیوں کا جائزہ لیا جائے تو بلاشبہ بیمار قیدیوں کی تعداد صت مند قیدیوں سے زیادہ ہوگی ۔
واضح رہےکہ اس حوالے سے فلسطینی  قیدیوں  کے امور کی نگراں کمیٹی نے حال ہی میں اعلان کیا تھا کہ کینسر کے مرض میں مبتلا قیدی "ناصر ابو حامد" کی جسمانی حالت تشویشناک ہے اور وہ کومہ میں ہیں،یادرہے کہ  اسرائیلی جیلوں میں فلسطینی قیدیوں کی تعداد 4500 کے لگ بھگ بتائی جاتی ہے جن میں 40 خواتین، 170 بچے اور  380 افراد ایسے ہی جوبغیر کسی الزام کے زیر حراست ہیں نیز عمر قید کی سزا پانے والے 543 قیدی ہیں  جبکہ بیمار قیدیوں کی تعداد 700 ہے جن میں سے 300 خطرناک  بیماریوں میں مبتلا ہیں۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین