امریکہ کے تمام بڑے شہروں میں ہائی الرٹ

امریکہ کے بڑے شہر ان دنوں پرتشدد مظاہروں کی ایک نئی لہر سے نمٹنے کے لئے درکار وسائل اور فوج تیار کررہے ہیں۔

ولایت پورٹل:موجودہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے حامیوں کے کانگریس کی عمارت پر حملے اور قانون ساز عمارت کی املاک کی تباہی اور لوٹ مار جس نے پوری دنیا کو حیران کردیا اور جمہوریت کے دعویدار کے طور پر امریکی عہدیداروں کو بھی شرمندہ کیا، ریاست ہائے متحدہ امریکہ کے بڑے شہر اب اس ہفتے پرتشدد مظاہروں کی ایک نئی لہر سے نمٹنے کے لئے درکار وسائل اور فوج تیار کررہے ہیں، خبر رساں ادارے روئٹرز نے بتایا ہے کہ امریکی 50 ریاستوں کے مراکز جہاں ریاستی کانگریس کی عمارتیں واقع ہیں وہاں مظاہروں کی ممکنہ لہر کا مقابلہ کرنے کے لئے رکاوٹیں اور باڑیں لگادی گئی ہیں اسی طرح شہر وں کے مختلف حصوں میں ہزاروں نیشنل گارڈ فورس کو تعینات کیاجا چکا ہےجبکہ اس سے قبل ایف بی آئی 50 ریاستوں میں قانون نافذ کرنے والے اداروں کو ریاستی کانگریسی عمارتوں کے سامنے مسلح مظاہرے کے امکان کے بارے میں متنبہ کر چکی ہے۔
واضح رہے کہ مشی گن ، ورجینیا ، وسکونسن ، پنسلوینیا اور واشنگٹن سمیت درجنوں ریاستوں میں  سلامتی کو بہتر بنانے کے لئے نیشنل گارڈ فورسز کو تعینات کیا گیا ہے، خبر رساں ادارے روئٹرز نے یہ بھی اطلاع دی ہے کہ واشنگٹن  ڈی سی میں فیڈرل کانگریس کی طرف جانے والی سڑکیں بند کردی گئی ہیں اور نیشنل گارڈ کی خفیہ افواج کی بٹالین شہر کے وسط میں کھڑی ہیں۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین