صیہونی فوج میں حزب اللہ کے حملہ کو خوف ہراس طاری

صہیونی حکومت سے وابستہ ذرائع نے لبنان کے ساتھ مقبوضہ فلسطین کی سرحد پر صیہونی فوج کی طویل مدتی تیاری کا ذکر کرتے ہوئے کہا ہے کہ تل ابیب کے خلاف حزب اللہ کا ردعمل یقینی ہے۔

ولایت پورٹل:العہد نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق صیہونی حکومت کے ایک ذرائع ابلاغ نے بتایا ہے کہ صہیونی اندازوں کے مطابق شام اور لبنان کے ساتھ مقبوضہ فلسطین کی سرحدوں پر صہیونی فوجی موجودگی طویل ہوگی، صہیونی اخبار معاریونے خبر دی ہے کہ صہیونی فوج کے ہیڈ کوارٹر کی صورتحال کا اندازہ اس خطے میں بڑھتے ہوئے تناؤ کی وجہ سے لگایا گیا ہے جس کے مطابق شام اور لبنانی سرحد پر تعطل ایک طویل عرصے تک جاری رہے گا، صہیونی میڈیا نے اس حکومت کی جاسوسوں کی نقل و حرکت میں اضافے کی نشاندہی بھی کی، صیہونیوں کا یہ اندازہ صہیونی فوج کے چیف آف آرمی اسٹاف ایوی کوکوی کے شمالی فلسطین کے دورے کے بعد لگایا گیا ہے۔
معاریو نے کہا کہ ممکن ہے کہ  حزب اللہ  کی فوج صیہونی عسکریت پسندوں کے خلاف اینٹی ٹینک میزائلوں سے آپریشن شروع کرے گی یا حزب اللہ کے اسنپر مقبوضہ فلسطین اور لبنان کی سرحد کے ساتھ اسرائیلی فوجیوں کو نشانہ بنائیں گے،صیہونی میڈیا نے اطلاع دی ہے کہ اسرائیلی فوج حزب اللہ کے رد عمل کے حوالے سے سخت خوف و ہراس میں مبتلا ہےاس کے سکیورٹی ذرائع کے مطابق حزب اللہ کا ردعمل ناگزیر ہے، صرف اس کا وقت معلوم نہیں ہے، اسرائیلی سکیورٹی ذرائع کا کہنا ہے  کہ حزب اللہ اسرائیل میں فوجی اہداف کو نشانہ بنا سکتاہے۔
قابل ذکر ہے کہ گذشتہ روز المیادین کے نمائندے نے کچھ ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ اسرائیلی فوج نے یہ جاننے کے بعد کہ حزب اللہ نے شام میں اپنے ایک مجاہد علی کامل محسن کی شہادت پر رد عمل ظاہر کرنے کےفیصلہ کیا ہے، فلسطین کی شمالی سرحدوں پر اپنی نقل وحرکت میں اضافہ کیا ہے۔
 


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین