Code : 3050 18 Hit

موساد کے سربراہ کا قطر کا دورہ

سابق صہیونی وزیر جنگ نے انکشاف کیا ہے کہ حال ہی میں صیہونی خفیہ ایجنسی موساد کے دو اعلی عہدہ داروں نے قطر کا دورہ کیا ہے۔

ولایت پورٹل:سابق صہیونی وزیر جنگ کا کہنا ہے کہ  صیہونی انٹیلی جنس سروس موساد  کے سربراہ یوسی کوہن نے دو ہفتے قبل قطر کا دورہ کیا ہے۔
’’ اسرائیل بیتنا‘‘پارٹی کے سربراہ ایویگڈور لیبرمین نے کہا ہے  کہ جنوبی مقبوضہ فلسطین خطے کے کمانڈر یوسی کوہن بھی اس دورے میں ان کے ہمراہ تھے۔
سابق صہیونی وزیر جنگ کے دعوی کے مطابق مذکورہ  صیہونی حکام بنیامین نیتن یاھو کی درخواست پر قطر گئے ہیں جہاں انھوں نے قطری حکام سے کہا ہے کہ وہ  فلسطینی اسلامی مزاحمتی تحریک کو پیسے دیتے رہیں ۔
والاہ نیوز ویب سائٹ نے  بھی لکھا ہے کہ کوہن نے اس دورہ میں  قطر  کی قومی سلامتی کونسل  اور قومی سلامتی کے مشیر سے ملاقات کی ہے  جس میں مغربی کنارے میں قطر کے سفیر محمد العمادی بھی موجود تھے۔
یادرہے کہ لیبرمین نے گذشتہ سال اسرائیل حماس کی جنگ بندی  معادہ پر تنقید کرنے کے بعداپنے عہدہ سے  استعفیٰ دے دیا تھا اور کہا تھا کہ  اس طرح کے معاہدے  کا مطلب حماس کو تسلیم کرنا ہے۔
لیبرمین نے صیہونی بستیوں پر راکٹ حملوں کو روکنے کے لئے حماس کے خلاف وسیع پیمانے پر فوجی کارروائی کا مطالبہ کیا تھا۔
واضح رہے کہ صہیونیوں کے خلاف انتقامی حملوں کو روکنے کے لئے حماس کی ایک شرط غزہ پاور اسٹیشن کو ایندھن کی فراہمی اور فلسطین کے اس حصے میں عملے کو تقسیم کرنے کے لئے غزہ کے حکام کو رقم کی ادائیگی تھی ، جس میں سے کچھ رقم کو  قطر نے مغربی پٹی میں تعینات  اپنے سفیر کے ذریعے ادا کرنے کے لیے آمادگی کا اظہار  کیا تھا نیز یہ امداد آج تک جاری ہے۔






0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین