Code : 3049 19 Hit

حماس کا صدی ڈیل کا مقابلہ کرنے کےلیے اپنے منصوبہ کا اعلان

فلسطینی اسلامی مزاحمتی تحریک حماس کے سیاسی دفتر کے نائب صدر نے اعلان کیا ہے کہ وہ صدی ڈیل کا مقابلہ کرنے کے لئے تین جہتی محور پر عمل کریں گے۔

ولایت پورٹل:فلسطینی اسلامی مزاحمتی تحریک حماس کے سیاسی دفتر کے نائب سربراہ ، صالح العاروری نے اقصی سیٹیلائٹ چینل کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا ہے کہ صدی  ڈیل کے نام نہاد معاہدے کے خلاف تحریک کا مؤقف واضح ہے جس کے تحت ہم تین جہتی محور پر عمل کریں گے ۔
حماس پولیٹیکل بیورو کے نائب صدر نے کہا کہ تین محوروں میں سےپہلا محورمیدانی ہے جس میں ہم  لوگوں سےمطالبہ کریں گے اور زمینی سطح پر ممکنہ طریقوں سے صدی ڈیل کا مقابلہ کرنے کی کوشش کریں گے۔
صالح العاروری نے مزید کہا کہ صدی  ڈیل سے نمٹنے کے پہلے محور میں مزاحمت ، عوامی ، فوجی اور نیم فوجی دستوں پر مشتمل تمام اقسام شامل ہیں۔
دوسرے محور کے بارے میں انھوں نے کہا کہ یہ محور قومی معاہدہ ہے۔
اس سلسلے میں  انہوں نے تاکید کرتے ہوئے کہا  کہ حماس نے فلسطینی اتھارٹی سے صدی ڈیل کا مقابلہ کرنے  کے قومی منصوبے پر اتفاق کرنے کی اپیل کی ہے تاکہ یہ ثابت کیا جاسکے کہ فلسطینی عوام پر کوئی منصوبہ مسلط نہیں کیا جاسکتا ہے۔
 حماس پولیٹیکل بیورو کے نائب سربراہ نے صدی ڈیل  سے نمٹنے کے لئے تیسرے محور کا حوالہ دیتے ہوئے وضاحت کی کہ تیسرا محور سیاسی ہے اور اس میں فلسطینی افواج کا قومی رویہ پر مشتمل  معاہدہ شامل ہے ،یہ صدی ڈیل کا مقابلہ کرنے کی معمولی قسم ہے۔
انھوں نے کہا کہ تیسرا محور آگے چل کر عرب ، اسلامی اور عالمی سیاسی نظام کو یکجا کرتے ہوئے جاری رہے گا۔
العاروری نے کہا کہ اس سلسلہ میں متعدد عہدہ داروں سے ہماری ملاقاتیں ہوئی ہیں اور ہم پورے خطے پر صدی ڈیل کے طویل خطرات کو واضح کریں گے۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین