یمنی عوام کے انصاراللہ کے حق میں عظیم مظاہرے

شمالی یمن کے شہر صعدہ میں ہزاروں افراد سڑکوں پر نکلے جنہوں نے امریکہ کی جانب سے اس ملک کی عوامی تنظیم انصاراللہ کو دہشتگرد قرار دیے جانے کے خلاف احتجاج کیا۔

ولایت پورٹل:المسیرہ نیوز چینل کی رپورٹ کے مطابق یمن کی عوامی تحریک انصاراللہ اور اس کے متعدد رہنماؤں کے خلاف امریکی حکومت کی حالیہ کارروائی کی مذمت کرنے کےلیے آج (پیر کو) یمن میں ہزاروں افراد سڑکوں پر نکل آئےجنہوں نے  انصاراللہ تحریک کی حمایت میں دارالحکومت سمیت 15 مختلف یمنی صوبوں میں ریلیاں نکالیں، واضح رہے کہ اس تحریک  کے خلاف امریکی حکومت کی کارروائی کی مذمت کرتے ہوئے صعدہ میں مظاہرین نے پلے کارڈز اٹھا کر ، انصار اللہ تحریک کو یمنی قومی عسکریت پسند گروہ کے نام سے یاد کیا، صعدہ کے عوام نے ایک بیان میں یمن کی جنگ کو پہلے مرحلے میں امریکی جارحیت قرار دیتے ہوئے کہا کہ سعودی اتحاد کی پہلی اور اہم فوجی اور سیاسی حامی امریکی حکومت ہے
جو یمنی عوام کی نسل کشی کے لئے ذمہ دار ہے۔
بیان میں زور دیا گیا ہے کہ انصاراللہ کو دہشت گرد کہنا یمن میں امریکی شکست کی علامت ہے اس لیے کہ اگر سعودی اور امریکی جارحیت پسندوں کے اقدامات دہشت گردانہ اور مجرمانہ نہیں ہیں تو جرم اور دہشت گردی کا کیا مطلب ہے؟،جارح ممالک کی حمایت سے یمن میں القاعدہ اور داعش کے اراکین لڑ رہے ہیں،مظاہرین نے یہ بھی کہا کہ یمن پر غیر ملکی تسلط کی مدت ختم ہو چکی ہے اور جارح ممالک کو یمن پر اپنے تسلط کی واپسی پر مایوس ہونا چاہئے۔
یادرہے کہ سابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے محکمہ خزانہ نے  اپنے آخری دنوں میں یمنی انصار اللہ تحریک کو اس کے تین رہنماؤں کے ساتھ  اپنی پابندیوں کی فہرست میں شامل کیا، تاہم  امریکی وزیر خارجہ انتھونی بلنکن نے حال ہی میں کہا ہے کہ واشنگٹن یمنی انصاراللہ تحریک کو دہشت گرد تنظیم قرار دینے پر نظرثانی کرے گا۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین