Code : 3836 11 Hit

جنرل قاسم سلیمانی کا قتل بین الاقوامی قوانین کے خلاف تھا:اقوام متحدہ

انسانی حقوق سے متعلق اقوام متحدہ کے خصوصی نمائندہ نے کہا کہ عراق میں امریکی فوجی ڈرون حملے کے نتیجے میں جنرل قاسم سلیمانی اور نو دیگر افراد کی شہادت بین الاقوامی قانون کی خلاف ورزی تھی۔

ولایت پورٹل:اسرائیلی اخبار حمودیہ  کی رپورٹ کے مطابق  اقوام متحدہ کے ہیومن رائٹس سے متعلق خصوصی نمائندہ  ایگنس کلمارڈ نے کہا ہے کہ "بغداد ہوائی اڈے کے نزدیک سردار سلیمانی کے قافلے پر اپنے حملے کو جواز پیش کرنے کے لئے امریکہ لازمی ثبوت فراہم کرنے میں ناکام رہا ہے۔
کالامارڈ نے اقوام متحدہ کے چارٹر کی خلاف ورزی  کرنے والے مذکورہ امریکی  دہشت گردانہ  کاروائی کا ذکر کرتے ہوئے مسلح ڈرونوں کی ٹارگٹ کلنگ کے ساتھ ساتھ اسلحہ قوانین کے وسیع پیمانے پر ریگولیٹری کا بھی احتساب کرنے کا مطالبہ کیا۔
کلامارد نے ایک خصوصی اور آزاد تفتیش کار کی حیثیت سے روئٹرز نیوز ایجنسی کو بتایا اس وقت دنیا ایک نازک وقت کی شکار ہے جبکہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل بھی ہاتھ پر ہاتھ دھرے بیٹھی ہے نیز عالمی برادری کے سروں پر بھی جیسے پرندے بیٹھے ہوئے ہیں ،اب وہ یا تو خاموش ہیں یا نہیں خاموش کیا گیا ہے۔
قابل غور بات یہ ہے کہ اگنیس کلمارڈ جمعرات کو ہیومن رائٹس کونسل کے سامنے اپنی تحقیق کے نتائج پیش کرنے والے ہیں تاکہ کونسل کے ممبران ضروری کارروائی پر تبادلہ خیال کرسکیں،تاہم ریاست ہائے متحدہ امریکہ دو سال قبل اس کونسل سے دستبردار ہوگیا ہے۔

 
 


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین